مقبرے

Poet: ابنِ مُنیب
By: ابنِ مُنیب, سکاکا

(نثرِ لطیف میں ایک اور تجربہ)


سوال کا "س" درسگاہوں سے نکال دیا جائے تو درگاہیں رہ جاتی ہیں
علم کے مقبرے
جہاں تحقیق نہیں ہوتی
تقلید ہوتی ہے
جہاں مجاور ناچتے ہیں حکایات کے گِرد
خرافات کے گِرد
فرسودہ روایات کے گِرد
جہاں جمود کے اندھیروں میں سڑتی ہڈیوں کا جشن منایا جاتا ہے
سوال مجرم ٹھہرتا ہے
اور سجدہ محترم
ارے علم تو زندہ پِیر ہے
یہ سوال سے گھبراتا نہیں
معتبر ہوتا ہے

- اِبنِ مُنیبؔ

Rate it:
16 Jan, 2020

More General Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Ibnay Muneeb
https://www.facebook.com/Ibnay.Muneeb.. View More
Visit 152 Other Poetries by Ibnay Muneeb »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City