میں ہار جاتا ہوں رشتے نبھانے کی خاطر

Poet: Mudassar Faizi
By: Mudassar Faizi, Lahore

میں ہار جاتا ہوں رشتے نبھانے کی خاطر
میں مسکراتا ہوں سب کچھ بھلانے کی خاطر

مری انا کو تو اکثر ہی ٹھیس لگتی ہے
میں ٹال دیتا ہوں، رب کو منانے کی خاطر

میں مانگتا ہوں صبر کی دعائیں اللہ سے
میں چوٹ دیتا نہیں ہوں رلانے کی خاطر

مجھے تو یہ بھی "ہنر" آج تک نہیں آیا
کہ جھوٹ بول سکوں میں خزانے کی خاطر

مرے سکوت کے اندر بڑی ہی ہلچل ہے
میں شانت رہتا ہوں سب کو بچانے کی خاطر

میں راضی رکھنے کی کوشش تو بہت کرتا ہوں
مگر میں مر نہیں سکتا زمانے کی خاطر

میں فیضی کیسے کہوں دل کی بات اب ان سے
جو بھولے اللہ کو دنیا کمانے کی خاطر

Rate it:
07 Jul, 2020

More General Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Mudassar Faizi
Visit 4 Other Poetries by Mudassar Faizi »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City