کرونا

Poet: Jahanzaib
By: Jahanzaib, Karachi

وباء پھیلی ہے ہر سو – کرونا
احتیاط و حفاظت تم بھی –کرونا

آزمائش نہیں- شامت ہے میرے اعمالوں کی
مان تو لیا ہے گناہ اپنا – توبہ تم بھی کرونا

خستہ حالی و بدحالی مقدر بن گئی ہے
املاک گئے-انسان گئے اب تو سدھرونا

جس پردے سے زن عاری تھی کل
آج وہ پردہ پیرو ! تم بھی کرونا

ادب و تہزیب کے عاری و انکاری ہو گئے
ہم بعض نہیں آینگے! جاری رکھو تم بھی کرونا

نادم بھی ہے اپنے کیے پہ ! یہ بندہ
غفلت کی بھی حد ہے اب تو دعا کرونا

وفاقی کرے-صوبائی کرے-بھائیو
یہ وباء جاں ہے لاک ڈاؤن کرونا

Rate it:
04 Jul, 2020

More General Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Jahanzaib
Visit 2 Other Poetries by Jahanzaib »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City