کون

Poet: محمد یوسف راهی
By: محمد یوسف راهی, کراچی

زندگی کی الجھنوں سے یہاں بچ سکا ہے کون
دکھ سکھ کے موسموں سے یہاں نکل سکا ہے کون

ہنستے ہیں مسکراتے ہیں بظاہر ہمارے سامنے
آنکھوں سے اشک گرنے سے یہاں روک سکا ہے کون

نفسانی خواہشوں میں یہاں پهنس چکے ہیں ہم
خواہشوں کے اس دلدل سے یہاں نکل سکا ہے کون

جو مقدر میں لکھا ہے وہی ہمارا نصیب ہے یاروں
زیاده حاصل اپنے مقدر سے یہاں کرسکا ہے کون

بھاگ رہا ہے ہر کوئی ایک دوسرے کے پیچھے راہی
اپنی منزل کو اس طرح سے یہاں پا سکا ہے کون

Rate it:
24 Jun, 2019

More General Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS
About the Author: محمد یوسف راهی
Visit 34 Other Poetries by محمد یوسف راهی »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City