کہانیاں تم لکھتے رہتے ہو

Poet: نعمان صدیقی
By: Noman Baqi Siddiqi, Karachi


افسانہ اور یہ کہانیاں تم لکھتے رہتے ہو
تمہاری ہی ہیں نادانیاں تم لکھتے رہتے ہو

لکھو زرا کچھ اور تھوڑا سا کرو غور
تمہاری ہیں یہ پرچھائیاں تم لکھتے رہتے ہو

کس کو ہے سنانا کس کو پڑھانا ہے
عروج و زوال رُسوائیاں تم لکھتے رہتے ہو

نیا ہے انداز اور کچھ کچھ پُرانا ہے
خوشی غم اُداسیاں تم لکھتے رہتے ہو

وقت یہ رُکتا نہیں قلم یہ تھکتا نہیں
بچپن پچپن جوانیاں تم لکھتے رہتے ہو

فانی فنا اپنی جگہ بقا بھی ہے نعمان
بڑھتی ہیں اور رعنائیاں تم لکھتے رہتے ہو

Rate it:
12 Mar, 2018

More General Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS
About the Author: Noman Baqi Siddiqi
Visit 75 Other Poetries by Noman Baqi Siddiqi »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City