"امی کے نام "

Poet: Rida soomro
By: Rida, Mirpurkhas

لکھنے بیٹھوں تو کبھی تھک نہ پاؤں
ایسے حسین لفظ کہاں سے لاؤں
لکھنے بیٹھی ہوں ماں کے نام
جنت کے ہیرے کہاں سے لاؤں

جس کے ہنسنے سے کھلتے ہیں گل
اس کی شان میں لفظ کہاں سے لاؤں
چاندنی چاند سے، مٹھاس شہد سے لےآؤں
بھر کر اس سے سیاہی گلاب پر لکھتی جاؤں

خلوص کا پیکر ،جنت کی دلیل ہے ماں
ہر حسین خواب کی تعبیر ہے ماں
ہمارے اک آنسو پہ جان نثار کرتی ہے ماں
ایسی عظیم ہستی کے لائق الفاظ کہاں سےلاؤں

پڑھ لیتی ہے آنکھیں،سمیٹ لیتی ہے ہر غم
ہر سخن دعا سے لبریز ،ہر دعا ہمارے نام
جس کے رونے پر فرشتے روئیں وہ ہے ماں
ایسی عظیم ہستی کے لائق الفاظ کہاں سے لاؤں

Rate it:
02 May, 2020

More General Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Rida
Visit 8 Other Poetries by Rida »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City