کہانی ادھوری سی

Poet: darakhshanda
By: darakhshanda, houston

 پہلو میں میرے بیٹھے تو تم ہو
پرتصور میں تمہارے کوئی اورہے

یوں تو کیا اٍظہا رٍ وفا ہم سے
ہونٹوں پہ آیا نام کوئی اور ہے

پڑھ لی دلکی بند کتاب تمہاری
سجی اٍس میں تصویر کوئی اور ہے

ڈھونڈ رہی ہیں بیتاب نگاہیں جسے
رہٍ سفرمیں وہ ہم نہیں کوئی اور ہے

چلے ہم سفر میں ساتھ ساتھ
مگر منظورٍ نظر تو کوئی اور ہے

کہاں تلک اپنا یہ ساتھ چلے
ہاتھ میں لکھا ساتھ کسی کا اورہے

اپنی بھی کہانی کچھ ادھوری سی
بینام سہی مگر ہم خیال کوئ اورہے

پڑھ لو تم بھی کہانی غمگین سی
لکھا نام اس میں بھی کوئی اورہے

منزل اپنی ایک نہیں کہانی کاانت کہیں اورہے
تمہیں جانا کہیں اورہے ہمیں جانا کہیں اورہے

Rate it:
06 Apr, 2017

More General Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: darakhshanda
Visit 39 Other Poetries by darakhshanda »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Very Very Very Nice and also depends on reality which is related to ..,.
thanks for sharing good work
stay blessed

By: UZMA AHMAD, Lahore on Sep, 01 2020

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City