سیارہ زحل کے گرد نئے چاند دریافت

نیویارک : سائنسدانوں کی ایک ٹیم نے سیارہ زحل کے گرد 20 نئے چاند دریافت کیے ہیں اور اس طرح زحل نے چاند رکھنے کے حوالے سے مشتری کو بھی پیچھے چھوڑ دیا ۔ زحل اب 20 نئے چاندوں کی بدولت نظام شمسی کے "چاندبادشاہ " کے طور پر راج کرے گا۔نظام شمسی کے سیارہ زحل کے گردنئے چاند کی دریافت کے بعد اب ان کی تعداد 82 ہو گئی ہے اس سے پہلے مشتری سب سے زیادہ چاند رکھنے والا سیارہ تھا ،جس کے گرد 79 چاند موجود ہیں ۔یہ تحقیق ہوائی میں موجود کارنیگی انسٹیٹیوشن آف سائنس نے ٹیلی سکوپ سوبارو کی مدد سے کی گئی ہے۔انسٹی ٹیوٹ کے سائنسدانوں نے سوبارو ٹیلی سکوپ کی مدد سے زحل کے گرد نئے چاند دریافت کیے جن کا قطر 3 میل ہے۔ کارنیگی انسٹی ٹیوٹ آف سائنس کے سکاٹ شیپارڈ ، جواس سیارے پر چاند کی دریافت کرنے والی ٹیم کے سربراہ ہیں ان کا کہنا ہے کہ زحل کے اردگرد تقریباً 100 چھوٹے چاند مزید دریافت ہوسکتے ہیں ۔شیپارڈ کا کہنا ہے کہ  "اگر ہم چھوٹے  چاند کو تلاش کرنا چاہتے ہیں تو ہمیں بڑی دوربین لینا ہوگی"۔ سیاروں کی یہ نئی دریافت تین مختلف گروہوں میں ہے، جس کا انحصار ان زاویوں پر ہے جن پر وہ اس کے مدار کے گرد گھومتے ہیں۔یہ دریافت سوبارو ٹیلی سکوپ کی مدد سے 2004 اور 2007 کے درمیان لیے جانے والے ڈیٹا پر نئے کمپیوٹنگ الگوردھم لگانے کے بعد سامنے آئی ۔انہوں نے مزید کہا کہ نئے چاند کی دریافت نظام شمسی کی تشکیل اور ارتقاء کے حوالے سے اہم معلومات کی   فراہمی میں اہم کردار ادا کرتی ہے۔سائنسدانوں کا خیال ہے کہ یہ چاند ان اشیاء کی باقیات ہیں جنہوں نے سیاروں کی تشکیل میں مدد کی لہذا ان کے بارے میں مزید تحقیق سیاروں کی تشکیل کے بارے میں مزید معلومات کی فراہمی میں مدددے گی۔رپورٹ کے مطابق دریافت ہونے والے 20 میں سے 17 چاند زحل کے مدار کے بر عکس چکر لگاتے ہیں ۔نئے چاند 3 سال کے عرصے میں اپنا ایک چکر مکمل کرتے ہیں۔سائنسدانوں نے بتایا کہ وہ چاند جو سیارے کے قریب ہیں وہ اس ہی کی سمت میں مدار میں گھومتے ہیں اور اپنا ایک چکر 2 سال کے عرصے میں مکمل کرتے ہیں ۔زحل نظام شمسی کا دوسرا بڑا سیارہ ہے اور اس کا اورسورج کا درمیانی فاصلہ اوسطاً 1 ارب 40 کروڑ کلومیٹر ہے جو 9 شمسی اکائیوں کے برابر ہے۔ایک شمسی اکائی زمین اور سورج کے درمیانی فاصلے کو ظاہر کرتی ہے۔ مدار میں زحل کی حرکت کی رفتار 9.69 کلومیٹر فی سیکنڈ ہےس رفتار سے زحل تقریباً 30 زمینی سالوں میں سورج کے گرد ایک چکر مکمل کرتا ہے ۔ ریسرچرز کی ٹیم نے ان چاند کے نام رکھنے کے لیے ایک مقابلے کا بھی اعلان کیا ہے ۔

 

WATCH LIVE NEWS

Samaa News TV PTV News Live Express News Live 92 NEWS HD LIVE Pakistan TV Channels

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.