50 سال سے لاپتا والد کو تلاش کرنے والد بیٹا آج بھی واپسی کا منتظر

ویب ڈیسک — 

جنوبی کوریا کا ایک شہری ہوانگ ان چیول پچھلے تقریباً 50 سالوں سے اپنے گمشدہ والد کی واپسی کا منتظر ہے۔ اس تلاش میں وہ خود بوڑھا ہوچلا ہے لیکن اسے امید ہے کہ ایک نہ ایک دن اس کے والد گھر ضرور لوٹیں گے۔

نصف صدی پہلے شمالی کوریا کے ایک ایجنٹ نے جنوبی کوریا کا ایک طیارہ ہائی جیک کیا تھا جس میں 50 مسافر سوار تھے جن میں ہوانگ ان چیول کے والد ہوانگ وان بھی شامل تھے۔

خبر ایجنسی اے ایف پی کے مطابق طیارے کے تمام مسافروں کو جنوبی کوریا لے جایا گیا اور بعد میں ان میں سے گیارہ مسافروں کے علاوہ باقی 39 مسافروں کو رہا کردیا گیا۔

ان گیارہ افراد میں ہوانگ وان بھی تھے جنہیں پیانگ یانگ نے کبھی واپس نہیں کیا جب کہ ہوانگ ان چیول نے اپنے والد کی تلاش کو اپنے زندہ رہنے کا مقصد بنالیا۔ وہ آج بھی اپنے والد کی آمد کے منتظر ہیں۔

ہوانگ صرف دو سال کے تھے جب انہوں نے اپنے والد کو آخری بار دیکھا تھا۔ وہ آج بھی اپنے والد کو ان کی تصویر کے ذریعے ہی جانتے اور پہچانتے ہیں۔ ان کی جوانی کا بیشتر حصہ اپنے والد کی تلاش میں ہی گزرا ہے۔

ہوانگ وان جنوبی کوریائی براڈ کاسٹر ایم بی سی میں بطور پروڈیوسرخدمات انجام دے رہے تھے۔ وہ کورین ائیر کے ذریعے گینگ ننگ سے سیئول جارہے تھے اور بزنس کلاس میں سوار تھے۔


 

WATCH LIVE NEWS

Samaa News TV PTV News Live Express News Live 92 NEWS HD LIVE Pakistan TV Channels

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.