حکومت نے ٹیکس وصولیوں کا ہدف حاصل نہ کرنے کا اعتراف کرلیا

اسلام آباد:(17جنوری 2020)سینیٹ اجلاس میں وزارت خزانہ نے سال دوہزارانیس بیس کے پہلے چھ ماہ میں ٹیکس وصولیوں کا ہدف حاصل نہ ہونے کا اعتراف کرلیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق سینیٹ کا اجلاس ڈپٹی چیئرمین سلیم مانڈوی والا کی زیرصدارت ہوا، وقفہ سوالات کے دوران ارکان کے سوالات کے جواب میں وزیر اقتصادی امور حماد اظہر نے غیرملکی قرضوں کے حجم میں اضافہ کا اعتراف کیا۔

ایوان بالا میں حماد اظہر نے بتایا کہ جی ڈی پی کے مقابلے میں قرض کےحجم میں اضافہ کی وجہ روپے کی قیمت میں کمی ہے،سال 2013 میں قرض کے مقابلے میں جی ڈی پی کا حجم 63.8 فیصد تھا، جو کہ دوہزار اٹھارہ میں بہتر فیصد اور اب اٹہتر فیصد ہے،تاہم آنے والے سالوں میں قرضے کا کل حجم جی ڈی پی کے مقابلے میں بہتر ہو گا۔

حماد اظہر نے سینیٹ کو بتایا کہ رواں مالی سال کے پہلے چھ ماہ کے دوران مالی خسارہ انیس سو بائیس ارب روپے تک پہنچ گیا ہے مالی خسارہ جی ڈی پی کا پانچ فیصد ہے، جبکہ حکومت نے نو ماہ کے دوران پینتیس ارب سے زائد مالیت کے قرضے لیے۔اجلاس میں اپوزیشن ارکان نے حکومت کی معاشی کارکردگی کو خراب قرار دیتے ہوئے کئی سوالات بھی اٹھائے،سینیٹر مشتاق نے کہا کہ حکومت نے معیشت کا برا حال کر دیا ہے جبکہ ایف بی آر کا شارٹ فال ساڑھے تین سو ارب سے تجاوز کرگیا ہے۔

سینیٹر رحمان ملک کا کہنا تھا کہ شرح ترقی میں تیزی سے کمی اور شرح مہنگائی میں روز بروز اضافہ ہوتا جا رہا ہے،حکومت بتائے کہ افراط زر کی شرح کیا رہی اور قرضہ واپسی کا کیا پروگرام بنایا ہے؟۔


 

WATCH LIVE NEWS

Samaa News TV PTV News Live Express News Live 92 NEWS HD LIVE Pakistan TV Channels

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.