صدر ٹرمپ: ’ماہرینِ ماحولیات تباہی کے پیغمبر ہیں‘

FABRICE COFFRINI

امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ماہرینِ ماحولیات کو ’تباہی کے پیغمبر‘ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اِن لوگوں کی پیشگوئیاں کئی دہائیوں سے غلط ثابت ہو رہی ہیں۔

ڈیواس میں ورلڈ اکنامک فورم سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ یہ وقت خوش امیدی کا ہے نہ کہ مایوسی کا اور یہ کہ لوگوں کو خوابوں کی ضرورت ہے۔

صدر ٹرمپ نے کہا کہ آب و ہوا میں تبدیلی کے مسائل کو ٹیکنالوجی کے ذریعے حل کیا جا سکتا ہے اور ایک تخلیقی معیشت ایسے مسائل کے حل تلاش کر لے گی۔

انھوں نے عالمی رہنماؤں پر زور دیا کہ وہ بیوروکریسی کو کم کر کے امریکہ میں ہونے والی معاشی ترقی کی تقلید کریں۔

صدر ٹرمپ کی تقریر کا زیادہ حصہ اپنی کامیابیاں گنوانے پر تھا اور سیاسی مبصرین کے خیال میں اِس کی ایک وجہ اِس برس ہونے والے انتخابات ہیں۔ انھوں نے کہا کہ حالیہ برسوں میں امریکہ میں معاشی سرگرمیوں میں تیزی سے معاشرے کے نچلے طبقات کو فائدہ ہوا ہے۔ انھوں نے معاشی نمو میں حالیہ تیزی کو 'بلو کالر بوم' کا نام دیا۔

انھوں نے 'قیامت کی پیشگوئیاں' مسترد کرنے پر زور دیتے ہوئے کہا کہ امریکہ اپنی معیشت کا دفاع کرے گا۔

FABRICE COFFRINI

صدر ٹرمپ نے گریٹا تھنبرگ کو براہ راست مخاطب نہیں کیا جو اس موقع پر 'آب و ہوا کی تباہی کو روکنے' کے موضوع پر ایک اجلاس کا افتتاح کر رہی ہیں۔

16 برس کی گریٹا تھنبرگ کا تعلق سویڈن سے ہے جو ماحول کے تحفظ کے لیے کام کر رہی ہیں۔ انھیں امریکا کے مشہور 'ٹائم میگزین' کی جانب سے سال 2019 کی شخصیت یعنی 'پرسن آف دی ایئر' قرار دیا گیا ہے۔

عالمی رہنماؤں کے اِس سربراہی اجلاس میں 'ماحول کی تباہی' ایجنڈے میں سرِ فہرست ہے۔

نوبل انعام یافتہ ماہرِ معیشت جوزف سٹگلٹز نے صدر ٹرمپ کی تقریر پر تنقید کی ہے۔ خبر رساں ادارے رائٹرز کے مطابق جوزف سٹگلٹز نے کہا ہے کہ یہ ایسا ہی ہے کہ ہم اپنی آنکھوں سے ایک چیز دیکھ رہے ہوں اور کہیں کہ وہ چیز وہاں نہیں ہے۔


 

WATCH LIVE NEWS

Samaa News TV PTV News Live Express News Live 92 NEWS HD LIVE Pakistan TV Channels

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.