’یقین دلاتا ہوں نور مقدم کیس میں کوئی کتنا ہی بااثر ہو،سزا ضرور ملے گی‘

image
وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ وہ نور مقدم کیس کو خود دیکھ رہے ہیں اور یقین دلاتے ہیں کہ قاتل بچ نہیں سکے گا۔

اتوار کو سرکاری ٹی وی پر قوم سے خطاب سے کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان خان نے نور مقدم کیس کے حوالے سے پوچھے گئے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ ’میں آپ کو یقین دلاتا ہوں کہ قاتل بچ نہیں سکے گا۔ چاہے قاتل دوہری شہریت ہی کیوں نہ رکھتا ہو۔ ‘

وزیراعظم عمران خان خان نے کہا کہ ’لوگ کہتے ہیں کہ قاتل بڑے مضبوط خاندان سے ہے اور کہیں وہ بچ نہ جائے۔ میں آپ کو یہ یقین دلاتا ہوں کہ قاتل بچ نہیں پائے گا۔ اگر کوئی یہ سمجھتا ہے کہ وہ امریکی شہری ہے تو وہ بچ جائے گا، ایسا نہیں ہوگا۔‘

نور مقدم کیس کے بارے میں مزید کہا کہ ’اس کی ایک ایک چیز کا مجھ کو پتا ہے۔ میں ایک ایک چیز کی تفصیل لی ہے۔ یہ بڑا خوفناک قسم کا کیس ہے۔‘

وزیراعظم عمران خان خان نے کہا کہ ’اس سے پہلے افغان سفیر کی بیٹی سے حادثہ ہوا تھا کہ اس کو کسی نے مارا ہے۔ میں نے اس کیس کو بھی اسی طرح فالو کیا ہے جیسے وہ میری بیٹی ہو۔ افغان ہمارے اپنے لوگ ہیں، ہم انہیں اپنے بھائی سمجھتے ہیں۔‘

وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ نور مقدم کیس میں قاتل نہیں بچ سکے گا۔ (فوٹو: ٹوئٹر)

’میں پولیس کو داد دوں گا کہ انہوں نے اس کی ایک ایک چیز کو فالو کیا۔ اسی طرح نور مقدم کیس میں بھی ایک ایک چیز کوفالو کر رہے ہیں۔ یہ بہت بڑی ٹریجڈی ہے۔ میں آپ سب کو یہ یقین دلانا چاہتا ہوں کہ کوئی طاقتور سے بھی طاقتور ہو، اس کو اس کیس میں سزا پوری ملے گی۔‘

انہوں نے کہا کہ ہم لاک ڈاؤن کر کے کسی بھی صورت اپنی معیشت کو تباہ نہیں کریں گے۔ لاک ڈاؤن کا مطلب لوگوں کو بھوکا رکھنا ہے۔

وزیراعظم عمران خان خان نے خطاب میں کورونا وائرس کے حوالے سے بات کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کورونا سے معیشت کو بچانے والا تیسرا ملک ہے۔

انہوں نے کہا کہ ڈیلٹا ویرینٹ سب سے خطرناک ہےاور یہ تیزی سے پھیلتا ہے۔

عمران خان نے شہریوں کو کورونا وائرس سے بچنے کے لیے احتیاطی تدابیر کی ترغیب دیتے ہوئے کہا کہ بند جگہیں جہاں زیادہ لوگ ہوں وہاں ماسک پہنیں۔ ایس او پیز میں ماسک پہننا سب سے آسان ہے۔‘

انہوں نے کہا کہ ’اس وبا کا ایک ہی علاج ہے اور وہ ویکسینیشن ہے، بچوں اور ٹیچرز کو ویکسین لگوانے کے سکول بھی نہیں کھولنے چاہئیں۔‘


News Source   News Source Text

WATCH LIVE NEWS

مزید خبریں
پاکستان کی خبریں
مزید خبریں

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.

47