چاند پر دریافت ہونے والی’جھونپڑی‘کی حقیقت سامنے آگئی

image

چین نے گزشتہ برس دسمبر میں اپنی خلائی گاڑی ’یو ٹو روور‘ کو نظر آنے والے جھونپڑی کی حقیقت معلوم کرلی۔

سی بی ایس نیوز کی کے مطابق گزشتہ ماہ چاند پر  دور سے نظر آنے والی پراسرار چیز جو  چوکور جھونپڑی کی طرح نظر آتی تھی،  سے متعلق مزید معلومات کے لیے چین کی خلائی گاڑی نے مزید تحقیقات کیں۔

اور اس کی نزدیک سے لی جانے والی تصاویر سے معلوم ہوا ہے کہ وہ کوئی جھونپڑی نہیں بلکہ ایک پتھر ہے۔

چین کی نیشنل اسپیس ایڈمنسٹریشن (سی این ایس اے) نے اس چیز کو ’پراسرار جھونپڑی‘  کے طور پر بیان  کیا تھا اور اس حوالے سے ازراہِ مذاق کہا تھا کہ شاید اسے کسی ایلین نے بنایا ہو۔

اگرچہ جھونپڑی کا لفظ صرف اس چوکور نما چیز کی شکل کی وجہ سے استعمال کیا گیا تھا مگر لوگوں کو اس کی حقیقت جاننے کا بہت تجسس تھا۔

اس ’پراسرار جھونپڑی‘ کی حقیقت جاننے کےلیے یو 2روور کو آہستہ آہستہ اس کی سمت بڑھایا گیا جو روور سے اندازاً 262 فٹ کے فاصلے پر واقع تھی۔

خلائی گاڑی  نے ہر روز صرف چند فٹ فاصلہ طے کیا کیونکہ یہ سفر بہت احتیاط طلب تھا اور  تقریباً ایک مہینے بعد یہ ’پراسرار جھونپڑی‘ کے نزدیک پہنچنے میں کامیاب ہوگئی۔

اب یوٹو 2 روور نے اس ’پراسرار جھونپڑی‘ کی مزید تصاویر جاری کی ہیں جو خاصی قریب سے کھینچی گئی ہیں۔

 ان تصاویر  سے معلوم ہوا ہے کہ یہ صرف چاند کے  تاریک حصے میں موجود  ایک معمولی پتھر ہے جو نجانے کب سے وہاں پڑا ہوا ہے۔


News Source   News Source Text

مزید خبریں
سائنس اور ٹیکنالوجی
مزید خبریں

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.