سست انٹرنیٹ پر بھی تیز کام کرنے والا سستا ترین فون متعارف؛ بغیر چارج کیے 2 دن تک استعمال کریں

image
چین کے موبائل ساز ادارے ٹیکنو نے اپنے مڈ رینج موبائلز کو وسعت دیتے ہوئے ایک اور نیا ماڈل پیش کردیا ہے۔

ٹیکنو پاپ 5 پرو کے نام سے متعارف کرائے گئے اس فون کی خاص بات اس میں استعمال ہونے والا آپریٹنگ سسٹم ہے جس کی بدولت یہ اس جگہ بھی بہترین کارکردگی دکھاتا ہے جہاں انٹرنیٹ کی سست روی کی وجہ سے دوسرے فون جواب دے جاتے ہیں۔

ٹیکنو پاپ 5 پرو کی اسپیسیفیکنشز

ڈسپلے

ٹیکنو پاپ 5 پرو میں6.52 انچ کی ایچ ڈی اسکرین دی گئی ہے، جو 720×1560 پکسلز اور 269 پی پی آئی( پکسلز پر انچ) کی ڈینسٹی کے ساتھ ہے۔

اسٹوریج اور ہارڈوئیر

اینڈروئیڈ 11( گو ایڈیشن ) کے آپریٹنگ سسٹم کے ساتھ اس فون کو 3 گیگا بائٹ ریم اور 32 جی بی اسٹوریج کے ساتھ پیش کیا گیا ہے، جسے مائیکرو ایس ڈی کارڈ کی مدد سے 256 جی بی تک بڑھایا جاسکتا ہے۔

کیمرا

ٹیکنو پاپ 5 پرو میں عقبی حصے پر 8 میگا پکسلز کا ڈیول کیمرا سیٹ اپ دیا گیا ہے، جب کہ سیلفی کے لیے سامنے کی طرف f/f/2.0 اپرچر کے ساتھ 5 میگا پکسلز سینسز کیمرا ہے۔

بیٹری

ٹیکنو نے اس ماڈل میں 6 ہزار ایم اے ایچ کی لیتھیم پولیمر بیٹری دی ہے جو اچھا بیٹری بیک اپ فراہم کرنے کی صلاحیت رکھتی ہے۔

پروسیسر

ٹیکنو پاپ 5 پرو میں 12این ایم کا میڈیا ٹیک ہیلیو A22 چپ سیٹ کے ساتھ 2.0 گیگا ہرٹزکا کواڈ کور پروسیسر دیا گیا ہے۔

کنیکٹویٹی

ٹیکنو پاپ 5 پرو کا آپریٹنگ سسٹم اینڈروئیڈ 11 گو ایڈیشن ہے جو سست رفتار انٹرنیٹ پر بھیی بہترین کام کرتا ہے۔

وائی وائے، جی پی ایس، بلیو ٹوتھ ورژن 4.20، مائیکرو یو ایس بی اور ایف ایم ریڈیو کے ساتھ یہ موبائل تھری جی نیٹ ورک پر کام کرتا ہے۔

سینسرز

فیس ان لاک سپورٹ اور فنگر پرنٹ سینسر کے ساتھ اس میں  ایکسیلیرومیٹر، جائرو اسکوپ، پراکسیمیٹٰی  سینسرز بھی دیے گئے ہیں۔

قیمت

ابتدائی طور پر ٹیکنو پاپ 5 پرو کو پولی کاربونیٹ باڈی میں آئس بلیو، ڈیپ سی  لسٹر اور اسکائے کینن رنگ میں پیش کیا گیا ہے۔

یہ فون بھی انڈیا میں 8ہزار499 بھارتی روپے (20ہزار پاکستانی) میں متعارف کرایا گیا ہے۔

Square Adsence 300X250

News Source   News Source Text

WATCH LIVE NEWS

مزید خبریں
سائنس اور ٹیکنالوجی
مزید خبریں

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.