امریکہ ایران مذاکرات کے بعد جوہری معاہدے کی بحالی کے امکانات مزید خراب، امریکی اہلکار

image

جوہری معاہدے سے متعلق ایران اور امریکا کے بالواسطہ مذاکرات بغیر کسی نتیجے کے ختم ہوگئے۔

ایک سینئر امریکی اہلکار کا کہنا تھا کہ قطر میں امریکہ ایران کے بالواسطہ مذاکرات کے بعد 2015 کے ایران جوہری معاہدے کی بحالی کے امکانات مزید خراب ہو گئے ہیں۔ تاہم  ایران امریکا 2 روزہ بالواسطہ مذاکرات کو ایران نے مثبت قرار دیا۔

ایرانی وزیر خارجہ کا کہنا ہے کہ جوہری معاہدے کی بحالی تک پہنچا جاسکتا ہے، حقیقی معاہدے پر پہنچنے تک بات چیت جاری رکھنے کے لیے پُرعزم ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: 

امریکہ اور ایران کے درمیان سفارتی تعلقات نہ ہونے کی وجہ سے، دوحہ میں ہونے والے مذاکرات بالواسطہ طور پر ہوئے، وفود نے الگ الگ کمروں میں اور ثالثوں کے ذریعے بات چیت کی۔

یاد رہے اس سے پہلے طویل مذاکرات کے بعد  جنوری 2016 میں جوہری معاہدہ طے پایا تھا۔ اس معاہدے پر براک اوباما کے دورِ صدارت میں دستخط کیے گئے تھے، لیکن ٹرمپ نے وائٹ ہاؤس پہنچنے سے بہت پہلے واضح کر دیا تھا کہ ان کے خیال میں یہ ‘بدترین ڈیل‘ ہے اور بار بار اسے ‘خوفناک‘ اور ‘مضحکہ خیز‘ قرار دیتے ہوئے طنز کیا۔

صدر ٹرمپ نے مئی 2018 میں امریکہ کو اس معاہدے سے نکال لیا تھا اور ایران پر دوبارہ پابندیاں لگا دی تھیں۔


News Source   News Source Text

مزید خبریں
تازہ ترین خبریں
مزید خبریں

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.