اے عشق! تیرے سر کی قسم

Poet: سید نذیر کاظمی
By: سید نذیر کاظمی , Al Ain

اے عشق! تیرے سر کی قسم ان پہ جو گزری
میں اپنے بھی دامن میں وہی خار چنوں گا

کہتی ہو سبھی سے کہ میں کرتا ہوں تماشہ
آ کر کبھی دیکھو تو سھی حال جنوں کا

“ہاں“ تم نہ کرو گی تو کوئ بات نہیں ھے
بس اتنا سمجھ لو کہ نہ انکار سنو گا

دم بھر کو تو ٹھہرو، یوں نہ بازو کو چھڑاؤ
وعدہ ھے کہ بس آخری اک بات کروں گا

اچھا چلو کہہ دو جو ھے سرگوشی میں کہنا
جو کچھ بھی ہو لیکن میں نہ اس بار ہنسوں گا

Rate it:
15 May, 2014

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS
About the Author: Syed Nazeer Kazmi
پابند ھے پرواز فقط تیرے افق پر
میں رونقِ افلاک ھوں، محصور نہیں ھوں
.. View More
Visit 26 Other Poetries by Syed Nazeer Kazmi »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City