بتا اے خوبرو تو چاہتی کیا ہے

Poet: مصحف علی میر
By: Mushaf Ali Mir, Rawalpindi

بتا اے خوبرو تو چاہتی کیا ہے
تیرے دل میں چھپا کیا
کہہ دے وہ سب کچھ جو توکہنا چاہتی ہے
ورنہ مجھے کوئی اور اپنا شہزادہ بنا لے گی
پر میں بھی مجبور ہوں اے خوبرو
تیرے علاوہ کسی اور کا ہو نہیں سکتا
تیرے سوا کسی اور کا ہاتھ پکڑ نہیں سکتا
اب سب کچھ تیرے ہاتھ میں ہے
کہ مجھ کو بگاڑنا ہے یا سنوارنا ہے
یا میر کو تم نے بھی دیوار سے لگانا ہے

Rate it:
29 Mar, 2020

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Mushaf Ali Mir
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City