بھلائی جان کے بھر دو ایاغ، تھوڑا سا

Poet: AzharM
By: AzharM, Doha

بھلائی جان کے بھر دو ایاغ، تھوڑا سا
ملے گا تشنہ لبوں کو فراغ، تھوڑا سا

جو کی تھی دفن محبت وہ مل تو جائے گی
کرید لوں جو میں یہ دل کا داغ ، تھوڑا سا

کمی کہاں پہ ہوئی ہے، مراد بر آئی
بھرا ہے تُم نے جو گھی سے چراغ، تھوڑا سا

کدورتوں کا سبب جاننا ضروری ہے
کبھی لگے تو سہی کچھ سُراغ، تھوڑا سا

سرور قرب کا ہے، یوں اثر تو رکھتے ہیں
یہ گُل یہ باد صبا اور یہ باغ ، تھوڑا سا

حقیقتیں ہیں بڑی تلخ، ہے دعا اظہر
قبول ان کو بھی کر لے دماغ ، تھوڑا سا

Rate it:
28 Jun, 2013

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS
About the Author: azharm
Simply another mazdoor in the Gulf looking 4 daily wages .. View More
Visit 179 Other Poetries by azharm »

Reviews & Comments

ہو اظہرم سا سبھی کا دماغ تھوڑا سا
ہمارا بھی تو ہو روشن چراغ تھوڑا سا
کہی ہے کیسے یہ اتنی حسیں غزل اظہر
ہے ڈھونڈنا ہمیں اس کا سراغ تھوڑا سا

By: NADEEM MURAD, umtata RSA on Jul, 07 2013

thnx n best regards 4 U Nadeem
bohat khush rahiay ap
By: azharm, Rawalpindi on Jul, 07 2013

buht khoob buht mukhtalif aur mushkil qafye buht khoobi se ghazal mein istemal kr k aik munfarid aur umda ghazal takhleeq ki hai
khush rahain shad abad rahain hamesha

By: uzma, Lahore on Jul, 01 2013

thnx n best regards 4 U Uzma
bohat khush rahiay ap
By: azharm, Rawalpindi on Jul, 01 2013
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City