بے بسی جب کبھی مسکرا دیتی ہے

Poet: Mubeen Nisar
By: Mubeen Nisar, Islamabad

بے بسی جب کبھی مسکرا دیتی ہے
زیست ہاتھ منزل کو لگا دیتی ہے

خواب ہی سہی تیری موجودگی مگر
زندگی کی تھکن اتار دیتی ہے

کیا طلسم ہے تیری نگاہ_ناز بھی
اندھیری شب میں دیئے جلا دیتی ہے

کانوں میں سنائی دیتی ہے تیری آواز
اور چلتی ہوا ترنم کا مزہ دیتی ہے

سحر قریب ہے ٹوٹ رہا ہے طلسم
پھولوں کو کیا بات رلا دیتی ہے؟

دیوار و در سے پوچھا کون آیا تھا؟
سنائی لوٹ کر اپنی صدا دیتی ہے

Rate it:
28 Nov, 2017

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS
About the Author: mubeen nisar
Business, Physics & literature... View More
Visit 240 Other Poetries by mubeen nisar »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City