تم ہو میں ہوں

Poet: حازق علی
By: Hazik Ali, MULTAN

تم ہو میں ہوں اور آسمان پاگل ہوتا جارہا ہے
عجب ہاتھ پکرتا ہوں چہرہ لال ہوتا جارہا ہے

ایک الگ ہی رت بن گئ ہے فزاؤں کی اب تو
حسن،آنکھوں آنکھوں میں گلاب ہوتا جارہا ہے

وقت کا تناسب ہی اچانک بگڑ ، گیا ہو جیسے
رکنا بھی چاہتا ہے کم بخت پر پار ہوتا جارہا ہے

بڑے مشکل سے تو جزبات سمبھالے تھے ہم نے
پر تمھیں دیکھ دیکھ، دن رات ہوتا جارہا ہے

تم ہو کہ زلف سمبھال ہی نہیں پارہی اپنی
اور جو ہوش تھا زرا سا وہ خمار ہوتا جارہا ہے

حازق آج چاند بھی دکھا رہا ہے آنکھیں کیوں
کہ میں آسمان ہوں روشن زمین ہوتا جارہا ہے

Rate it:
18 Oct, 2019

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Hazik Ali
Visit 8 Other Poetries by Hazik Ali »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City