جو مشکلیں خود ہی ٹال دیتا ہے

Poet: مرید باقر انصاری
By: مرید باقر انصاری, Karachi

جو مشکلیں خود ہی ٹال دیتا ہے
وہ درد بھی بےمثال دیتا ہے

میں خوش ہوں مالک کی سب عطاؤں پر
وہ کیسے کیسے کمال دیتا ہے

عطائیں کرنے پہ وہ جو آ جاۓ
تو دولتیں لازوال دیتا ہے

ہمارے جیسے فقیر لوگوں کو
وہ شاعری باکمال دیتا ہے

غرور ان میں کہاں سے آتا ہے
وہ جن کو حُسن و جمال دیتا ہے

دلیر ایسا ہے کون دنیا میں
جو اپنے دشمن کو ڈھال دیتا ہے

وہ حُسنِ یوسف جو سامنے آۓ
تو سب کو الجھن میں ڈال دیتا ہے

ستمگری اس کی دیکھو تو باقرؔ
وہ پیار لے کر ملال دیتا ہے
 

Rate it:
13 May, 2016

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS
About the Author: مرید باقر انصاری
Visit 213 Other Poetries by مرید باقر انصاری »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City