درد

Poet: م الف ارشیؔ
By: Muhammad Arshad Qureshi, Karachi

اک درد کی مانند میں لفظوں میں نہاں ہوں
کہتے ہیں مجھے لوگ کہ میں شعلہ بیاں ہوں

میں جانتا ہوں اس کو بہت خوش ہے وہ اب بھی
وہ بھول چکی ہے کہ میں کیسا ہوں کہاں ہوں

سب کچھ ہی بدل ڈالا پھر اندازِ بیاں نے
میں اس کا یقیں تھا مگر اب اس کا گماں ہوں

لکھتا ہوں بے خوف اب پسِ دیوار کے قصے
کہتا ہے قلم میرا کہ میں تیری زباں ہوں

رکھتے ہیں جو غیروں کے لیے پیار کا جذبہ
ہاں ایسے قبیلے کا میں اک روحِ رواں ہوں
 

Rate it:
22 Oct, 2019

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Muhammad Arshad Qureshi
My name is Muhammad Arshad Qureshi (Arshi) belong to Karachi Pakistan I am
Freelance Journalist, Columnist, Blogger and Poet.​President of Internati
.. View More
Visit 197 Other Poetries by Muhammad Arshad Qureshi »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City