رات کے اندھیروں میں ناچتی ہے چاندنی

Poet: JAVAID DANIEL
By: JAVAID DANIEL, Lahore

رات کے اندھیروں میں ناچتی ہے چاندنی
پُو جو پھُوٹنے لگے بھاگتی ہے چاندنی

دیکھتا ہے جس طرح چھُپ کے کوئی دِل رُبا
نیم وا دریچوں سے جھانکتی ہے چاندنی

دھڑکنوں کی تھاپ پر چاندنی ہے رقص میں
رات کے سکوت میں ہانپتی ہے چاندنی

اِس جہاں سے بے خبر، بے خودی میں رات بھر
میری بے بسی پہ کیوں ناچتی ہے چاندنی

ہجرتوں کے شہر میں رَتجگوں کے قہر میں
سولیوں پہ کیوں مجھے ٹانکتی ہے چاندنی

حرف حرف روشنی مانگتا ہوں رب سے مَیں
جیسے آفتاب سے مانگتی ہے چاندنی

اُس کو بھولنے کا جاویدؔ سوچ لے کبھی
اُس کو بھُول جانے سے روکتی ہے چاندنی
 

Rate it:
03 May, 2020

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: JAVAID DANIEL
Visit 6 Other Poetries by JAVAID DANIEL »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City