رہے تھے مانگتے جس کو ہم اک دعا کی طرح

Poet: میم الف ارشیؔ
By: Muhammad Arshad Qureshi, Karachi

رہے تھے مانگتے جس کو ہم اک دعا کی طرح
ہمارے ساتھ رہا وہ مگر سزا کی طرح
 
ہمارے نام جو اس نے لکھا تھا پہلا خط
ہمیں تو درد میں بھی وہ ملا شفا کی طرح
 
وہ ایک بات جو ہم نے کبھی کہی ہی نہیں
تمام شہر میں پھیلی ہے کیوں وبا کی طرح
 
عذاب عشق میں ہم نے بہت سے جھیلے ہیں
خدا کرے نہ ملے کوئی بے وفا کی طرح
 
کبھی تجھے بھی ضرورت پڑے دعاؤں کی
میں پھر رہا ہوں ترے شہر میں گدا کی طرح
 

Rate it:
03 Mar, 2021

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS
About the Author: Muhammad Arshad Qureshi
My name is Muhammad Arshad Qureshi (Arshi) belong to Karachi Pakistan I am
Freelance Journalist, Columnist, Blogger and Poet.​President of Internati
.. View More
Visit 213 Other Poetries by Muhammad Arshad Qureshi »