شوق تخریب سے بچنا ہے ہمیشہ وشمہ

Poet: وشمہ خان وشمہ
By: وشمہ خان وشمہ, ملائیشیا

"پھر کسی آس میں یہ لوگ جئے جاتے ہیں"
زیست کا زہر بھی ہنس ہنس کے پئے جاتے ہیں

گو وفا راس نہیں سادہ دلوں کو لیکن
ہم ہیں مجبور وفا تجھ سے کئے جاتے ہیں

زندگی تیری عداوت ہے ہماری قسمت
تری خوشیوں کا ابھی جام پئے جاتے ہیں

وہ ہیں مشہور جفاؤں میں زمانے بھر میں
ہونٹ الفت کے طلبگار سئے جاتے ہیں

شوق تخریب سے بچنا ہے ہمیشہ وشمہ
شوق تنہائی میں زندہ ہیں جئے جاتے ہیں

Rate it:
08 Oct, 2015

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS
About the Author: وشمہ خان وشمہ
I am honest loyal.. View More
Visit 4714 Other Poetries by وشمہ خان وشمہ »

Reviews & Comments

maim very nice poetry

By: Mohammad Shafiq, karachi ( Pakistan ) on Oct, 12 2015

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City