منتظر بیٹھا ہوں تیرے لیے محبوب میری

Poet: dr.zahid Sheikh
By: Dr.Zahid Sheikh, Lahore Pakistan

منتظر بیٹھا ہوں تیرے لیے محبوب مری
دیکھتا ہوں میں ہر اک لمحہ یہاں راہ تری

میرے ویرانے میں آجا تو بہاروں کو لیے
اپنے معصوم سے چہرے کے نظاروں کو لیے
پیار سے تھام لے آکر مرے ہاتھوں کو ذرا
موتیے اور گلابوں بھرے ہاروں کو لیے

کس قدر پیاسی ہے تیرے لیے یہ روح مری
منتظر بیٹھا ہوں تیرے لیے محبوب مری

یاد ہے آج بھی وہ شام وہ ویران شجر
جس کے نیچے تو کھڑی سوچ رہی تھی بے خبر
بنسری کوئی بجاتا تھا کہیں دور بہت
اس کی تانوں کا ترے دل پہ ہوا کتنا اثر

اور کچھ سوچ کے چپکے سے پھر اک آہ بھری
منتظر بیٹھا ہوں تیرے لیے محبوب مری

بالیاں کانوں میں پہنے تو چلی آتی ہے
میرے خوابوں میں ، تصور میں مسکراتی ہے
چوڑیاں تیری کھنکتی ہیں خیالوں میں مرے
اور گھونگٹ سے مجھے دیکھ کے شرماتی ہے

تیری ہر سانس ہے پھولوں کی طرح خوشبو بھری
منتظر بیٹھا ہوں تیرے لیے محبوب مری

دور رہتی ہے ترے پاس میں آ سکتا نہیں
سوچتا ہوں کہ تجھے پا کے بھی پا سکتا نہیں
خود سے کہتا ہوں تجھے بھول ہی جاؤں لیکن
میری محبوب ! تجھے دل سے بھلا سکتا نہیں

کاش ہوتی نہ مجھے ایسی کوئی مجبوری
منتظر بیٹھا ہوں تیرے لیے محبوب مری

Rate it:
21 Jan, 2013

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS
About the Author: Dr. Zahid Sheikh
AM AN HONEST MAN AND LIKE HONEST AND LOVING PEOPLE....
[email protected]
.. View More
Visit 447 Other Poetries by Dr. Zahid Sheikh »

Reviews & Comments

شکریہ شاہین مغل صاحبہ آپ نے دل کھول کر داد دی جس کے لیے بے حد شکریہ۔۔۔۔۔۔۔ میں نے اس لیے پوچھا تھا کہ میں قومی اخبارات اور چند ادبی میگزین کے علاوہ کہیں بھی اپنی شاعری اشاعت کے لیے نہیں بھجوایا کرتا ۔ اب تو سوائے اس ویب کے کہیں اور بھیجتا نہیں ہوں کہ وقت ہی نہیں ملتا۔ کسی شخص نے کسی اخبار یا ادبی میگزین میں پڑھ کے سیالکوٹ کے کسی اخبار کو یہی نظم بھیج دی ہو گی لیکن شکر ہے میرے نام سے ہی شائع ہوئی۔۔ نجانے میری شاعری لوگوں نے کہاں کہاں بھیج رکھی ہے مجھے اس کا کوئی علم نہیں۔ میں تو محض شوق کی خاطرشاعری کرتا ہوں اور بس اچھی ہے یا بری آپ کے سامنے ہے۔ آپ کا بے حد شکریہ اچھی بہن اپنی دعاؤں میں یاد رکھنا

By: dr.zahid sheikh, lahore,pakistan on Jan, 23 2013

KUCH COMMENTS SHAHEEN SAHIBA JALDI MEIN SUB SEY NECHEY COMPOSE HO GAEY HEIN UNHEN BHI PARH LEN SHUKRIA
By: Dr.Zahid Sheikh, lahore pakistan on Jan, 23 2013

itna khubsurat guldasta kay har phol buhat nayab or khubsurti say saja ha har phol ke mehak dil man uthar gae.man is ghazal par is say behtr coments nae ml rahy thy................i like it,,,,,,,,,,,,,,,,,,smieeeeeeeeeeeeeeeeeeeeeeeeeeee

By: Ayesha khan, D,punjab on Jan, 23 2013

THANX AYSHA SAHIBA FROM DASKA AAP KI TAREEF BOHAT PIARI LAGI ALLAH AAP KO HAMESHA KHUSH RAKHEY AAMEEN
By: Dr.Zahid Sheikh, lahore pakistan on Jan, 23 2013

قابل رشک قابل تعریف سر صاحب (بڑے بھائی)!
مین معذرت خواہ ھوں آپ نے پہلی بار مجھ سے کچھ کام کہا مگر مصروفیت کی بنا پہ بھول گئی ۔ امید ھے معا ف فرما دیں گے ۔ پلیز ۔
آپ کا کلام “ عزم کے پیکر “
جہاں میں زندہ رہیں گے جو جاں لٹا کے چلے
ھر ایک ظلم و ستم کا نشاں مٹا کے چلے
آپ کے نام سے “پنجاب انٹرنیشنل ڈسکہ (سیالکوٹ) کے اخبار میں ١٥تا ٣٠ جون ١٩٩٧ کے شمارے میں شائع ھوا ۔
میں نے ڈسکہ اپنے ماموں کے پاس یہ اخبار دیکھا ،وہ سٹڈی کے بڑے شوقین ہیں ۔ ان کے پاس کافی اولڈ کتابیں ہیں شائد یہ اخبار بھی محفوظ رہ گیا ، آپ سے اسی لئے عرض کی تھی کہ کیا آپ اخبار میں بھی لکھتے ہیں ۔
امید ھے دیر سے بتانے پہ ناراض نہیں رہیں گے ۔
ھمہشہ مسکراتے رہیں آمین ثم آمین ۔آپ دعاؤں کی طالب

By: Shaheen Mughal, gjn,Pakistan on Jan, 23 2013

THANX SHAHEEN SAHIBA AAP K LIEY REPLY ISI PAGE PAR MOJOD HAI .SEE THAT PLZ AND THANX FOR APPRECIATION. BE HAPPY
By: Dr.Zahid Sheikh, lahore pakistan on Jan, 23 2013

قابل رشک سر جی !بات مکمل نہ ھو پائی ۔
اے شہنشاہ غزل سانوں کر دتا جے پزل ۔
اس لئے لکھا کہ آپ کی شاعری پڑھنے کے بعد خوش تو بھت ھوتی ھوں ۔مگر یہ سوچ کر پزل ھو جاتی ھوں کہ سب ٹاپک پہ آپ اتنا اچھا لکھ چکے ہیں کہ اب اس سے اچھا مین کیسے لکھوں کہ مجھے تو الفاظ کے استعمال بھی نہیں آتا ۔
میں ادب کی دنیا میں بہت پیچھے ھوں ۔ادبی مہارت سے نابلد ھوں ۔ یہ ھی بات باعث پزل بنتی ھے ورنہ آپ کی ذات یا غزل پہ تنقید نہیں ۔کہ آپ اپنے کلام میں اس کی گنجائش نہیں چھوڑتے ۔کاش میں علم عروض کا آپ سے کچھ سیکھ سکتی شاعری وزن میں کرنا سیکھ سکتی ۔ہمیشہ خوش رہیں آمین ثم آمین

By: Shaheen Mughal, gjn,Pakistan on Jan, 23 2013

THANX SHAHEEN SAHIBA FURSAT MILNEY PAR AAP KI REHNUMAEE ZROOR KARUN GA .BE HAPPY
By: Dr.Zahid Sheikh, lahore pakistan on Jan, 23 2013

اے شہنشاہ غزل سانوں کر دتا جے پزل
اے شہنشاہ غزل ،
قابل رشک و قابل قدر مخترم استاد جناب زاہد صاحب !
آپ نے ایک اور دل چھو لینے والے گیت کا ایک بڑا ھی پیارا و نایاب تخفہ ہم سب کو دیا کہ شکریہ اور تعریف کے لئے الفاظ بہت کم پڑ گئے ہیں ۔
ادبی مہارت کی عمدہ مثال بن چکے ہیں آپ ۔داد کے لیے ساری دنیا کے پھول آپ کی کاوش کی نظر ۔
آج آپ کے اس گیت کی روانی میں میں بہہ گئی کہ سر کی گونج میرے کانوں میں ایک عرصہ رہے گی ۔
آپ نہ صرف ایک اچھے شاعر ہیں بلکہ ایک نفیس انسان بھی ہیں آپ نے مجھے بہن کا مان دے کر اپنی شفقت کا قائل کر لیا ۔ دل باغ باغ ھو گیا اور آپ کے اخترام سے مذید بھر گیا ۔کسی کو مان دینا ،بھرم رکھنا ھر ایک کے بس کا روگ نہیں مگر بھائی آپ میں یہ خوبی پائی جاتی ھے ۔
ہمہشہ ڈھیروں دعائیں آپ کے ساتھ ساتھ ہیں ۔ خوش رہیں ۔آباد و شاد رہے آپ کا گھر بار ۔آمین ثم آمین
آپ کی مخلص اور قیمتی مشوروں اور دعاؤں کی طالب ۔شاہین مغل

By: Shaheen Mughal, gjn,Pakistan on Jan, 23 2013

SHAHEEN SAHIBA MEIN NEY JWAB LIKH DIA HAI ISI PAGE PAR TLAASH KR LIEJIEY JALDI MEIN KUCH SEY KUCH HO JATA HAI.THANX FOR APPRECIATION. BE HAPPY HAPPY AND HAPPY BUT....ALWAYS
By: Dr.Zahid Sheikh, lahore pakistan on Jan, 23 2013

آپ بہت انتظار کرانے کے بعد کیوں آتے ہیں آج آپ کی پوئٹری دیکھی تو قرار آیا اور کیا بات ہے کیا زبردست لکھی یہ نظم دکھ اور انتظار کی کیفیت سے بھری ہوئی ایک ایکشعر میں درد جھلکتا ہے آپ برا نہ مانیں تو ایسا لگتا ہے کوئی گہری چوٹ کھائی ہے پیار میں وگرنہ ایسی شاعری نہیں ہوتی ۔ اصل حقیقت لگتی ہے۔ آپ کی شاعری پڑھ کے کئی بار آنکھوں میں نجانے کیوں آنسو آ جاتے ہیں اتنااثر کرتی ہے مجھ پر آپ قاقعی بہت اچھا لکھتے ہیں اور دل کی گہرائی سے آپ کے لیے بہت دعائیں کرتی ہوں زاہد صاحب اللہ آپ کو سدا خوش رکھے آمین آمین آمین

By: Sara Afzal, pakistan on Jan, 22 2013

SARA SAHIBA BOHAT KOSHISH KARTA HUN REGULAR HO JAUN BUS WAQT RUKAWAT BUN JATA HAI . RAHI CHOT KHANEY KI BAAT TO CHALIEY AAP KEHTI HEIN TO SHAED THEEK KEHTI HON LEKIN YE TO SIRF POETRY HEIN APNI CHOTEN KOEE DUNIA KO THORA HI DIKHATA HAI. TASALI RAKHEN KOEE GAR BAR NAHI HAI AUR ZINDGI KI GARI BARI SMOOTH CHAL RAHI HAI .BE HAPPY SARA SAHIBA
By: Dr.Zahid Sheikh, lahore pakistan on Jan, 23 2013

Zahid Sahib Hasb-e-mamool aik aur shahkaar geet.Wohi Dheema laikin lau data huwa makhsoos lehja.Nikhra huwa aur bohat nupa Tula be had dil nashin lehja o andaaz-e-Kalam.Apni mehboob ke liye muhabbat ki shiddat aur intizaar aur sulgatey Huey jazbat ka izhar bohat umdagi se kar ke aap ne apney Kalam ko jawedan bana dia hai.Bohat khoob Zahid Sahib geet ka har Bol surreela aur dil main utar janey wala hai.Aap such much lafzon ko bartna khoob jantey hai.lafz aap ke tabeh hain,aap lafzon ke tabeh nahin aur yehi chez aap ki shayary ko mumtaz karti hai.Aap ka apna aik rang aur dhang ha ashar kehney ka.
Daad ke phool on ke saath duain ke un giant nazraney qabool farmaiye aur roshnian bantteye raheye.

By: Azra Naz, Reading UK on Jan, 22 2013

LAGTA HAI PHOOLON KI BAARISH HO RAHI HAI .AAP NEY APNEY MAKHSOOS ANDAAZ MEIN LOVELY WORDS SEY APPRECIATION KI. APP KA BOHAT SHUKRIA AZRA NAZ SAHIBA AIK IDEA DIA THA TUND MUND DRAKHT AUR BANSARI WALA TO SOCHA CHALEN US IDEA PAR AIK GEET HI LIKH DALEN .AAP KO ACHA LAGA TO GOYA QEEMAT WSOOL HO GAEE .THANX AGAIN BE HAPPY HAPPY AND HAPPY BUT .....ALWAYS
By: Dr.Zahid Sheikh, lahore pakistan on Jan, 23 2013

aap ki poetry ki kia baat hai aatey bohat dino baad hein mein pooch sakti hun kun har roz kun nahi aatey. lekin chalen itni achi poem likhney par muaaf kia . bohat hi achi dilkush poem likhy.lekin udaas bhi bohat kia.janey kis key liey likhtey hein wo hai kahan aik baar bta den pakar key aap key paas lana hum sub friends ka kaam hai..arerey arey naaraz ho gaey chalen ab ziada tang nahi karti.aap ki ye poem hai zabardast daad le len zahid jee

By: ayesha khan, karachi on Jan, 22 2013

AREY AAP KI MZAQ KI ADAT HUMEN MAAR DALEY GI .ESI KOEE BAAT NAHI JUST POETRY TASALI RAKHEN HUM KISI K QABOO ANEY WALEY NAHI.THANX FOR APPRECIATION BE HAPPY AYSHA SAHIBA
By: Dr.Zahid Sheikh, lahore pakistan on Jan, 23 2013

khubsurat nazam likhi hai sir
padh kar maza ah gya sda
khush rehien.....Asghar

By: asghar, birmingham on Jan, 22 2013

THANX ASGHAR SAHIB BE HAPPY JNAB E MAN
By: Dr.Zahid Sheikh, lahore pakistan on Jan, 23 2013

abhi comments likhey they on line nahi huey .pata nahi kun.aap ney bohat acha likha hai be happy

By: Iram, lahore on Jan, 22 2013

THANX IRAM SAHIBA FOR APPRECIATION THANX AGAIN BE HAPPY HAPPY BUT .....ALWAYS
By: Dr.Zahid Sheikh, lahore pakistan on Jan, 23 2013

میرا خیال ہے یہ بہترین شاعری کا ایک نمونہ ہے اس سے زیادہ اب کیا کہوں آپ لفظوں کا استعمال کرنے میں ماہر ہیں اور انگوٹھی میں نگینے کی طرح الفاظ شعروں میں جڑ دیتے ہیں ۔ بہت خوب اس اداس شاعری نے اداس بھی کیا ہے اور خوش بھی بہت۔

By: Haroon Gillani, pakistan on Jan, 22 2013

THANX HAROON SAHIB AAP KI TAREEF MEREY LIEY BOHAT BARA IJAAZ HAI THANX AGAIN SIR BE HAPPY
By: Dr.Zahid Sheikh, lahore pakistan on Jan, 23 2013

This poetry is like a romantic songs you can say.......but full of love and affections can be found for someone and asking her to come and meet with garland for me.......Outstanding sir ji.......be happy and write in the same way...too much appreciations from me..........God bless you.....

By: jamil Hashmi, Rawalpindi on Jan, 22 2013

BUNDULE OF THANX JAMIL HASHMI SAHIB BE HAPPY BUT.....ALWAYS
By: Dr.Zahid Sheikh, lahore pakistan on Jan, 23 2013

wah jnab zahid sahib ki nazam kahi lutf aa gia .zabardast har shair khoobsurat treen .tareef key liey ilfaz nahi hein merey paas.bohat khush rahen mohtram

By: Nadeem Haq, Multan on Jan, 22 2013

NADEEM HAQ SAHIB AAP KA BE HAD SHUKRIA BOHAT KHUSH RAHIEY SIR THANX AGAIN BE HAPPY
By: Dr.Zahid Sheikh, lahore pakistan on Jan, 23 2013
میں نے اس لیے پوچھا تھا کہ میں زیادہ تر قومی اخبارات اور چند مخصوص ادبی میگزین کو ہی اہنی شاعری روانہ کرتا تھا تو حیرت ہوئی کہ اس میگزین میں وہ نظم کیسے چھپ گئی ۔ دراصل کسی نے میری یہ نظم کہیں اور پڑھ کے اس میگزین کو شائع کرنے کے لیے بھیج دی ہو گی لیکن یہ اچھا کیا نام میرا ہی رہنے دیا ورنہ کسی کا کلام لوگ اپنے نام سے چھپوا لیتے ہیں اسی لیے آپ سے پوچھا تھا ۔نجانے کہاں کہاں میری غزلیں لوگوں نے چھپنے کے لیے بھیج دیں ہیں مجھے اس کا کچھ علم نہیں ہے
آپ نے تعریف کے جو الفاظ استعمال کیے ان کے لیے آپ کا بے حد شکریہ بہت خوش رہیے ۔۔۔۔ ویسے کافی عرصہ سے اب میں اپنی شاعری اخبارات کو نہیں بھیج رہا کہ وقت کی کمی اس کی اجازت نہیں دیتی ۔۔۔ میری بہن آپ کو جتنا جانتا ہوں اتنا بتا دیا کروں گا ذرا فرصت مل جائے ۔
By: Dr.Zahid Sheikh, lahore pakistan on Jan, 23 2013
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City