وہ ناراض بھی نہیں ہے اور بات بھی نہیں کرتا

Poet: M. Zain Ul Abideen
By: M. Zain Ul Abideen, Islamabad

وہ ناراض بھی نہیں ہے اور بات بھی نہیں کرتا
مجھ پہ اک نظر کی خیرات بھی نہیں کرتا

وہ سننا ہی نہیں چاہتا ہے کسی سے مرا ذکر
اب وہ مجھ پہ پہلی سی برسات بھی نہیں کرتا

جانے وہ کیوں رہتا ہے مجھ سے خفا خفا
جانے وہ کیوں مری جانب التفات بھی کرتا

نہیں کرتا زین وہ مجھ پہ وصل کی صبح
وہ مجھ پہ ہجر کی رات بھی نہیں کرتا

Rate it:
12 Jun, 2020

More Sad Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: M. Zain Ul Abideen
Visit Other Poetries by M. Zain Ul Abideen »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City