پوچھئے نہ حال دل بیقرار کا

Poet: Hasan Shamsi
By: F.H. Siddiqui, Lucknow ( India )

جادو کچھ ایسا چلا مجھ پہ حسن یار کا
اب حال پوچھئے نہ دل بےقرار کا

قسمت سے ہو گیا تھا قدم رنجہ یار کا
اب خوشبؤوں سے حلقہ ہے میرے مزار کا

لایا ہے یار سے میرے ، شب بھر کو مانگ کر
ہے چاند سارا حسن یہ تیرا ادھار کا

رکھ دیتا قدموں میں ترے دل کو نکال کر
ہوتا بھروسہ گر ترے قول و قرار کا

بس کھیل دھوپ چھاؤں کا کھیلے ہے زندگی
ہوتا ہے رقص روز ہی لیل و نہار کا

یا رب ! شراب عشق ہے کیسی بلا عجیب
اب تک ملا نہ توڑ جو اس کے خمار کا

اب حد سے بڑھ گئے ہیں ستمگر ترے ستم
بس بھی کر امتحاں مرے صبر و قرار کا

خواہاں ہوں بس چمن میں بہاروں کا میں حسن
شیدائی ہوں گلوں کا ، نہ دشمن میں خار کا

Rate it:
07 Jan, 2015

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS
About the Author: F.H.SIDDIQUI
*Social science teacher and trainer

.. View More
Visit 158 Other Poetries by F.H.SIDDIQUI »

Reviews & Comments

بہت اچھے

By: Mohammad Sadiq Mushwani, Quetta on Jan, 08 2015

Shukria janab Mohd Sadiq saheb . Khush rahye
By: F.H.SIDDIQUI, Lucknow on Jan, 15 2015
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City