کہہ رہی ہے مرے کانوں میں بشر کی صورت

Poet: وشمہ خان وشمہ
By: وشمہ خان وشمہ, ملایشیا

"ہر بشر دیکھنے لگتا ہے بشر کی صورت "
کہہ رہی ہے مرے کانوں میں بشر کی صورت

حرف سچائی کے جب جب بھی مٹے ہیں دل سے
ڈھونڈ لیتی ہے اسے میری نظر کی صورت

ایسے غفلت کدہ میں آئے کہ ہم بھول گئے
وہ مجھے بھول گیا ہے تو ہنر کی صورت

زندگی کیا ہے مسائل کا خزانہ ہی تو ہے
اپنی خوشبو سے کوئی پھول نظر کی صورت

شمع جلتی ہے کسی اور کے غم میں لیکن
شام غم بیت گئی زیر اثر کی صورت

ٹوٹے حسرت کا منارہ تو کوئی فکر نہیں
کیسی مجبوری ہے اک بار خبر کی صورت

آنکھ کھلتے ہی عجب بات مرے ساتھ ہوئی
گم ہوا پھر مرے خوابوں کا نگر کی صورت

سانس لینی بھی ہے دشوار چمن میں وشمہ
آگئی ہوں تری چوکٹ پہ پیر کی صورت

Rate it:
14 Apr, 2016

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS
About the Author: وشمہ خان وشمہ
I am honest loyal.. View More
Visit 4713 Other Poetries by وشمہ خان وشمہ »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City