ہم سفر اپنا ہے نہ رہبر نہ کوئی کارواں

Poet: Tanzeem Akhtar
By: tanzeemakhtar, doha

ہم سفر اپنا ہے نہ رہبر نہ کوئی کارواں
تو بتا اے زندگی جاؤں میں اب تنہا کہاں

کوئی تجھ سا مل نہ پایا اس بھرے سنسار میں
ڈھونڈ کر دیکھا ہے میں نے یہ زمین و آسماں

نیند کیوں آتی نہیں مجھ کو فراق یار میں
ہجرکی راتوں میں وہ بھی جاگتا ہوگا وہاں

کیسے آخر ڈھونڈتا صحرا میں تم کو ہم نشیں
نقش پا سب مٹ چکے باقی نہ تھے کوئی نشاں

یا الہی کیسی ہوں گی رونقیں اس شہر کی
نعمتیں بٹتی ہیں ہر سو خیر و برکت کی جہاں

کام کچھ ایسا تو کر تنظیم ، بن جائے مثال
بعد تیرے یہ جہاں دہرائے تیری داستاں
 

Rate it:
28 Apr, 2020

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: tanzeemakhtar
Visit Other Poetries by tanzeemakhtar »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City