ہے دور تیرا نگر نہ دے دکھائی میاں

Poet: وشمہ خان وشمہ
By: وشمہ خان وشمہ, ملایشیا

کبھی تو دل کی صدا اس کو دے سنائی میاں
ہے دور تیرا نگر نہ دے دکھائی میاں

ہمیشہ وصل کی گھڑیاں کبھی نہیں رہتیں
وہ عشق کیا ہے جو عمروں کی ہو جدائی میاں

میں تیرے پیارکی قیدی ہوں حال پوچھ مرا
یا پھر سدا کے لیے قید دے رہائی میاں

مجھے تو تیری طلب ہے کچھ اور مانگا نہیں
خدا سے کب یہ کہا ہے جو دے خدائی میاں

کیوں آدمی کبھی انسان بن نہیں پاتا
بتاؤ اس میں بھلا کیا ملے برائی میاں

زباں سے اپنی تو ظاہر ہوں میں بہت یہ ناز
دعا ہے رب سے دل کو ہی پارسائی میاں

Rate it:
11 Feb, 2017

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS
About the Author: وشمہ خان وشمہ
I am honest loyal.. View More
Visit 4712 Other Poetries by وشمہ خان وشمہ »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City