اپریل کی صبح

Poet: AhberBy: Ghulam Muhy ud Din, Lahore

صبح کے بادل دیکھے تم نے۔۔؟
کتنے رنگ برساتےہیں
بُوندا باندی روشن کرنیں
کیا سنگیت سُناتے ہیں۔؟
ابھی اُڑے ہیں چڑیا پنچی
موسم کے گُن گاتے ہیں
مست ہواوں کے جھونکوں نے
مست طبیعت کردی ہے
اندر اک انسان ہے عہبر
باہر خاکی وردی ہے

Rate it:
Views: 372
22 Apr, 2014