-خواب نگر-

Poet: افراءعروج
By: Ifra Arooj, Faisalabad

خواب سرہانے پڑے رہتے ہیں
اک اُمید ہے وہ کبھی مُجھ کو جگانے آئے

مجھ کو ڈھونڈے میرے پیار کی کہانی بن کر
مجھ کو اک گھونٹ محبت کا پلانے آئے

مجھ میں رہ جائے وہ میرا بن کر یا
اسے کہہ دو مجھے اپنا بنانے آئے

جب میں تنہا ہوں مجھے تھامے آ کر
جب میں رُسوا ہوں تو وہ گُنگُنانا چاہے

جب میں چپ ہوں تو وہ بادل سا گرجے
جب میں ہنس دوں اُس پہ تبسُم چھائے

جب میں بن جاٶں اک مورتی کی طرح
وہ چپ چاپ مجھ سے لپٹنا چاہے

میری دعاٶں کو وہ جانے نہ دے ضائع
اسے کہہ دے وہ مجھ کو بچانے آئے

میری ڈھیروں اداسی کا صلہ مجھ کو ملے
مجھ کو اِک پل پیار سے بلانے آئے

وہ میرے لَرزتے لَب دیکھ لے آ کر
یا اپنی آواز مجھ کو سُنانے آئے

مجھ پہ وار کرے نظروں سے
یا مجھے بوسہ تحفے میں دینے آئے

میری مٹی اڑا جائے ہوا بن کر
اگر میں گِر جاٶں تو مُجھ کواُٹھانے آئے

اب میں چاہتی ہوں کہ روٹھ جاٶں
شرط یہ ہے کہ وہ مجھ کو منانے آئے

Rate it:
04 Jun, 2020

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Ifra Arooj
Visit 4 Other Poetries by Ifra Arooj »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City