جام کمال کا بطور پارٹی صدر الیکشن کمیشن کو خط

image

فائل فوٹو

وزیر اعلیٰ بلوچستان جام کمال نے اليکشن کميشن کو بطور پارٹی صدر خط لکھا ہے جس کے مطابق جنرل سیکریٹری کے خط کی پارٹی آئین اور قانونی کوئی حیثیت نہیں۔

اپنی ٹویٹ میں وزیراعلیٰ بلوچستان نے چیف الیکشن کمشنر پاکستان کے نام لکھا گیا خط شیئر کیا۔

خط کے متن کے مطابق 11اکتوبر2021 کو باپ پارٹی کا ایک خط بھیجا گیا لیکن پارٹی کے جنرل سیکریٹری کو یہ اختیار حاصل نہیں کہ پارٹی صدر کی موجودگی میں قائم مقام صدر منتخب یا اس کی سفارش کرے۔

انہوں نے لکھا کہ میں نے پارٹی کے آئین اور قانون کی رو سے تحریری طور پر اپنا استعفیٰ نہیں دیا اور تاحال پارٹی صدر کے فرائض بلا تعطل سر انجام دے رہا ہوں۔

خط کے علاوہ وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال نے ناراض تین وزراء کی پرانی ویڈیو بھی ٹویٹر پر شئیر کی۔ ويڈيو ميں ظہور بلیدی، سردار کھیتران اور اسد بلوچ موجودہ حکومت اور جام کمال کی تعریف کر رہے ہیں۔

وزیر اعلیٰ بلوچستان کا کہا تھا کہ چند ماہ پہلے حکومت کی کارکردگی کے گن گانے والے آج کچھ اور کہے رہے ہیں۔ عوام جانتے ہیں اپوزیشن اور قوم پرستوں کے پیچھے ان کے کیا مقاصد ہیں۔

جام کمال نے وضاحت دی کہ افواہیں گردش کر رہی ہیں کہ میں نے استعفیٰ دے دیا ہے لیکن میرے استعفیٰ دینے کی خبروں میں کوئی صداقت نہیں ہے۔ ایسا پروپیگنڈا کرنے میں چند افراد ملوث ہیں۔

دوسری جانب کوئٹہ میں رکن اسمبلی ظہور بلیدی نے میڈیا سے گفتگو میں کہا ہے کہ ہم تحریک عدم اعتماد جمع کرا چکے ہیں اور گورنر بلوچستان پابند ہیں کہ سات دن میں اسمبلی اجلاس طلب کریں۔

ظہور بلیدی نے کہا کہ پارٹی کے 11 اور تین اتحادی ارکان فیصلے پر قائم ہیں، تہیہ کرلیا ہے کہ جام کمال کو اسمبلی کے ذریعے نکالیں گے۔


News Source   News Source Text

WATCH LIVE NEWS

مزید خبریں
تازہ ترین خبریں
مزید خبریں

Meta Urdu News: This news section is a part of the largest Urdu News aggregator that provides access to over 15 leading sources of Urdu News and search facility of archived news since 2008.