آج بیٹھے تھے سوچا چلو اسے سوچتے ہیں

Poet: H.M. Salman Amin
By: H.M. Salman Amin,

آج بیٹھے تھے سوچا چلو اسے سوچتے ہیں
پھر سوچا بہتر ہے کچھ اور ہی سوچتے ہیں

سوچنا تو اس کو وقت کا زیاں ہی ہے صرف
پھربھی نجانے کیوں ہم اسے ہر وقت سوچتے ہیں

کاش کے وہ بھی کبھی ہمیں سوچے ایسے
جیسے ہم اس کو اپنے دل سے سوچتے ہیں

اس کے دیے گہرے زخموں نے کیا ہے گائل ہمیں
پھر بھی ہم ان کے سوا کچھ نہیں سوچتے ہیں

کبھی تو وہ اپنے کیے پہ پچھتاۓ گا شاید
اے سلمان کب آۓ گا وہ وقت یہی سوچتے ہیں

Rate it:
26 Mar, 2020

More Sad Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: H.M. Salman Amin
Visit 13 Other Poetries by H.M. Salman Amin »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City