آج کی شام اپنے لبوں کو رہائی دو

Poet: واجد نبی
By: Wajid Nabi, Karachi

آج کی شام اپنے لبوں کو رہائی دو
کہ تمھاری آواز ان کانوں کی معراج ہے
تمھارے لب حسن و رانائی کا راض ہیں
آج کی شام اپنی زلفوں کو بکھرنے دو
کہ یہ لمہوں کی بندش سے رہا چاہتی ہیں
جیسے خوشبوۓ تمھارا پتا چاہتی ہیں
آج کی شام سب کچھ یہں رہنے دو
آج کی شام مجھے وصال کی کمائی دو
آج کی شام اپنے لبوں کو رہائی دو
آج یہ بات آنکھوں سے آنکھوں کو کہنے دو

Rate it:
30 Aug, 2019

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Wajid Nabi
Visit 16 Other Poetries by Wajid Nabi »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City