اور اب خود سے جدا ہو کر ----

Poet: UA
By: UA, Lahore

 بتایا تھا کہ رونا ہی
محبت کا مقدر ہے

زمانے کی عداوت میں
فنا ہو جانا قسمت ہے

محبت کو پناہ دینا
نہیں شیوہ زمانے کا

نہیں مِل پائے گا رستہ
کہیں دامن بچانے کا

یہ ضد اچھّی نہیں ہوتی
محبت سے چھڑا دامن

فنا ہو جائیگی ورنہ
مگر ناداں نہیں مانی

محبت کی حقیقت کو
نہ جانی اور نہ پہچانی

تہی دامن لئے بیتٹھی ہے
تنہائی کے جنگل میں

اور اب خود سے جدا ہو کر
محبت خوب روئی ہے

Rate it:
19 Aug, 2020

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: uzma ahmad
sb sy pehly insan phr Musalman and then Pakistani
broad minded, friendly, want living just a normal simple happy and calm life.
tmam dunia mein amn
.. View More
Visit 3322 Other Poetries by uzma ahmad »

Reviews & Comments


تہی دامن لئے بیٹھی ہے
تنہائی کے جنگل میں

By: UZMA AHMAD, Lahore on Sep, 16 2020

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City