اُس سے اب واسطہ نہیں رکھنا

Poet: Azharm
By: Azharm, Doha

اُس سے اب واسطہ نہیں رکھنا
کوئی بھی عارضہ نہیں رکھنا

اب اُٹھائیں گے ہم جو دیواریں
بیچ میں راستہ نہیں رکھنا

میری تنہائی میں وہ رہتا ہے
سنگ اب قافلہ نہیں رکھنا

اور بھی مسئلے ہیں دنیا میں
زلف کو ریختہ نہیں رکھنا

رونق بزم ہو گئی رُخصت
یارو اب دائرہ نہیں رکھنا

وہ مرے روبرو رہے اظہر
بس مجھے آئنہ نہیں رکھنا

 

Rate it:
02 Jul, 2013

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS
About the Author: azharm
Simply another mazdoor in the Gulf looking 4 daily wages .. View More
Visit 179 Other Poetries by azharm »