ایمان کتنا ، شِکستہ ہوگیا ہے

Poet: اخلاق احمد خان
By: Akhlaq Ahmed Khan, Karachi

ایمان کتنا ، شِکستہ ہوگیا ہے
گناہ پھر ، دانستہ ہوگیا ہے

جن مُنکرات کا باغی تھا کبھی دل
اُنہیں کا رَفتہ ، رَفتہ ہو گیا ہے

چلنا پُرلطف و سہل تھا جس پر
کٹھن کتنا وہ ، رَستہ ہو گیا ہے

چلو چل کر پڑھتے ہیں نماز کہ
اِسے پڑھے بھی ، ہفتہ ہو گیا ہے

بہہ کر بھی رنگ نہیں لاتا اب تو
لہو مسلماں کا کتنا ، سستا ہوگیا ہے

اخلاق وہ کفر کا تھرتھرانا لرزنا
چھوڑو یہ قصہ ، گزشتہ ہوگیا ہے

Rate it:
08 Mar, 2020

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Akhlaq Ahmed Khan
Visit 111 Other Poetries by Akhlaq Ahmed Khan »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City