بغاوت نہ سمجھئے گا

Poet: بلبل سفیر)بختاور شہزادی)
By: BAKHTAWAR SHEHZADI, GUJRAT

صرف تجھے پانے آئے ہیں
تجھ کو تیرے ہی قلعے میں
فقط فتح کرنے آئے ہیں
تجھ پہ سب اثاثے وار کے
بس خود کو وارنے آئے ہیں
ہمیں تیری سلطنت کی کیا خبر
تجھے اپنی دینے آئے ہیں
گر ہار گئے تو فقط
سزائے موت دیجئے گا ہمیں
آخری خواہش کہنی ہے
رہائی نہ دیجئے گا ہمیں
دغا تو دیجئے گا مگر
اعتبار جلادوں کا نہ کیجئے گا
اپنے ہاتھوں سے قتل کرکے
قصہ درد بنا دیجئے گا ہمیں
آہ تک نہ بھریں گے
بڑی خوشی سے ماریے گا ہمیں
فقط آنکھوں میں دیکھئے گا
شاید پڑھ پائیں گے انہیں

Rate it:
17 Mar, 2020

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: BAKHTAWAR SHEHZADI
Visit Other Poetries by BAKHTAWAR SHEHZADI »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City