بِلا جواز تو ہوتا نہیں خفا کویٔ

Poet: Azra Naz
By: Azra Naz, UK

بِلا جواز تو ہوتا نہیں خفا کویٔ
کِسی سے ہوتی ہے کچھ تو کہیں خطا کویٔ

یہ سوچ کر میں دُکھاتی نہیں غریب کا دِل
کہ لگ نہ جاۓ کہیں مجھ کو بد دُعا کویٔ

عجیب ڈھنگ سے گذری ہے زندگی ا پنی
نہ اجنبی ہے شہر میں ، نہ آشنا کویٔ

ہم ایک بوند بھی پیتے نہ زہرِ تنہایٔ
رۂ حیات میں ملتا جو آپ سا کویٔ

تو ہی غفورُ ہے ، تو ہی رحیم ہے مولا
نہیں ہے تیرے سوا میرا آسرا کویٔ

تجھی پہ ختم ہے میری محبتوں کا سفر
نہیں ہے تجھ سا زمانے میں دوُسرا کویٔ

مجھی سے عذراؔ بغاوت پہ دِل اُتر آیا
نہیں ہے دِل سا زمانے میں بے وفا کویٔ
 

Rate it:
24 Nov, 2012

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS
About the Author: Azra Naz
My First Poetry Book DASHT E JAAN is published now and available in market.I am a caring,loving and fair play person.
Believe in truth , honesty and
.. View More
Visit 250 Other Poetries by Azra Naz »