تم کہہ دو ُجدائی کا یہ آخری ماہ ہے

Poet: Arooj Fatima Lucky
By: Arooj Fatima Lucky, K.S.A

کہتے ہیں دل سے دل راہ ہوتی ہے
تو کیا تمہارے دل کی میرے دل سے راہ ہے

نفرت تو جتاتے رہتے ہو سرے عام
سچ بتاؤں کیا تمہارے میں میری چاہ ہے

خاموش ہو جاؤں گئی میں پھر نہیں پوچھو گئی
تم کہہ دو ُجدائی کا یہ آخری ماہ ہے

شکر ہے وہ غفور و رحیم میری سن لیتا ہے
ورنہ ُاس کے آگئے میری کوئی جاہ ہے

میں ڈوبتے ڈوبتے الله نا کہتی تو کیا کہتی
کیا ُاس کے سوا کہیں پناہ ہے

وہ میری اچھائیوں یا ُبرائیوں کا کیا سمجھے
جن کے دل ہی غفلتوں سے سیاہ ہے

Rate it:
04 Oct, 2013

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS
About the Author: A F
Visit 1082 Other Poetries by A F »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Very beautiful sharing
BE HAPPY WITH ALL THE BEAUTIES OF LIFE

By: Dr.Zahid Sheikh, Lahore Pakistan on Oct, 07 2013

Zahid bahi thanks for appreciate with kind comment. .. be happy always
By: Arooj Fatima(Lucky), Riyadh on Oct, 08 2013
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City