تیرے دل کے بھرے محفل سے ہم جُدا ہو کے چلے

Poet: مصور خان
By: Mussawer Khan , Peshawar

تیرے دل کے بھرے محفل سے ہم جُدا ہو کے چلے
دنیا بھی کیا عجیب ہے ہم دل پہ فدا ہوکے چلے

جانتا تھا کچھ نہیں ملتا جھوٹو اور مکار وعدوں سے
پر کیا کرے دل وہ نظر پر ہم ادا ہوکے چلے

زندگی کَٹ رہی ہے اُس کی بِنا اب تو لیکن
یادیں در یادیں اُس کی ہم کو ایک نِدا ہوکے چلے

یاد آتے ہے ہم محض ضرورت کی خاطر
جہاں گِرے سر بسُجود یادِ سدا ہوکے چلے

ترے وصل کے پروانے تو ہم آج کل بھی ہے
تہی قسمت اپنی ہی ہاتھوں سے بَدا ہو کے چلے

ہم بھی خُوب ناداں ہے مصّور غمِ ہستی میں
ویسی ہی غمِ بوجھ خود پہ لُدا ہوکے چلے

Rate it:
17 Jul, 2020

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Mussawer Khan
Visit 4 Other Poetries by Mussawer Khan »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City