دل کا زخم کانٹوں سے سیا جا رہا ہے

Poet: Syed Farrukh Imdad
By: Syed Farrukh Imdad, Lahore

دل کا زخم کانٹوں سے سیا جا رہا ہے
عشق کا علاج ایسے بھی کیا جا رہا ہے

تو موجود نہیں بھی تو محفل میں
میری جان ، تیرا نام لیا جا رہا ہے

جام نہیں موجود مے خانے میں تو کیا
مے کو ساقی کی آنکھوں سے پیا جا رہا ہے

ہونٹوں سے پیاس کو بجھایا ہے اس نے آج
یہ کس بات کا صلہ مجھ کو دیا جا رہا ہے

وہ انگلی دانت میں دبا کے بیٹھے ہیں سوچنے
دل ہی دل میں کوئی فیصلہ کیا جا رہا ہے

خوش نصیبی ہے کہ تیرے نام کے ساتھ
فرخ کا نام ہر محفل میں لیا جا رہا ہے

Rate it:
28 Aug, 2019

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: Syed Farrukh Imdad
Visit 12 Other Poetries by Syed Farrukh Imdad »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City