دل کا چین

Poet: asad
By: asad, mpk

لیٹے بھی چین دل کو کہین آرام نہین ملتا
ڈھونڈہین قرار اب کہان کوئی بام نہین ملتا

ان سے حال دل کہتے ہمکو موت آتی ھے
اور بن کہے بھی سکون کوئی آرام نہین ملتا

کہنے کو تو شاد ہین ہم اپنی دنیا مین
مگر خوشی کا کوئی لمحہ برائے نام نہین ملتا

وہ بھی بچون سی ضد لیے رہتا ھے ہر گھڑی
جائو تو کبھی صبح وہ کبھی شام نہین ملتا

وہ جو دل کی تختی پر کندہ ھے ہمارے
بارہا ڈہونڈھا کیے ہم مگر وہ نام نہین ملتا

ھم کو غم ہجر کی راتون پر ناز ھے
جن مین ایک پل کو بھی آرام نہین ملتا

اس دل پر چھاپ عشق کی ایسی چھپی ھے
کہ دل کو ہنوز ما سوا کوئی اب کام نہین ملتا

خدا جانے زمانے کو نظر کس کی لگ گیئ
با ادب تھا کبھی اب اس مین احترام نہین ملتا

اسد سلام عشق خط مین روز ان کو لکھتا ہون
مگر وان سے کوئی جواب مین سلام نہین ملتا

Rate it:
16 Jul, 2020

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS

About the Author: asad
Visit 415 Other Poetries by asad »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City