رکھ دیا توڑ کے جیسے کوئی تارا ہوگا

Poet: وشمہ خان وشمہ
By: وشمہ خان وشمہ, ملایشیا

رات آنسو کو تری آنکھ میں دیکھا ہوگا
رکھ دیا توڑ کے جیسے کوئی تارا ہوگا

گمشدہ جسم ملے حلقۂ بازو جاگے
شام سے اوڑھ لیا آج سویرا ہوگا

غم میں خوش رہتے ہیں ہر سایۂ قربت سے دور
اب بدل ڈالا مزاج اہل وفا کا ہوگا

اوس میں مہکی ہوئی رات کے پونچھے آنسو
صبح کو دے دیا ہنستا ہوا چہرا ہوگا

ختم خوش فہمئ سیرابی ہوئی ہونٹوں تک
آنکھ سے دیکھا ہے پیاسا کوئی دریا ہوگا

چکھ لیا جذبۂ وارفتہ نے اک رنگ حیات
کر لیا اپنے لب سادہ کو اچھا ہوگا

Rate it:
14 Mar, 2018

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS
About the Author: وشمہ خان وشمہ
I am honest loyal.. View More
Visit 4712 Other Poetries by وشمہ خان وشمہ »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City