شب اُلفت

Poet: Faiza Umair
By: Faiza Umair, Lahore

شب اُلفت میں ڈوب رھا ھے سفینہ اپنا
وقت کے بھنور نے بنا دیا ھے پرایا اتنا

یادوں کے سائےبھی ڈھل چکے ہیں وحشت سے
اُجڑی شاموں نے بسا لیا ھے ڈیرہ اپنا

اپنی آغوش میں چھپا لو دشت تنہائی سے
رہ جائے گا ورنہ مٹی کا ڈھیر اور فسانہ اپنا

سکوں کا متلاشی تھا دل وائے ناداں
پر مٹ گئ ہستی اور بن گیا ریگ زار چمن اپنا

چند لمحے نہ سہی دو گھڑی ہی کر دو میرے نام
دیکھ کوئ بن رہا ھے زندگی کا خود قاتل اپنا

قیس نے بھی ہاری تھی پیار میں زندگی کی بازی
کاش!!! میری محبت میں بھول جائے تُو بھی نام اپنا

تم بھی کھو گئے احساس خودی میں “فائز“
تمہیں تھی ہی نہیں محبت، تم بھی نہ بن سکے میرا اپنا

Rate it:
07 Sep, 2015

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS
About the Author: Faiza Umair
Visit 82 Other Poetries by Faiza Umair »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

بہت ہی اعلیٰ اور خوبصورت غزل ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ہر شعر عمدہ اور بہترین ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ پڑھ کر مزہ آگیا ۔۔۔۔۔۔۔۔۔ جذاک اللہ خیراً

By: farah ejaz, Aaronsburg on Sep, 08 2015

بہت شکریہ!!!! آپکی پسندیدگی تحریر کو مزید پختگی سے لکھنے میں حوصلہ افزائ کرتی ھے ۔ ۔ ۔
خوش و آباد رہیں!!!!
By: Faiza Umair, Lahore on Sep, 11 2015
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City