شب ہے،تنھائی ہے ، میں ہوں،محبوب ہے

Poet: Hasan Shamsi
By: F.H.SIDDIQUI, Karachi

 شب ہے،تنھائی ہے ، میں ہوں،محبوب ہے
یہ نوازش تری اے خدا خوب یے

جب سے افشاء ہوا اپنی الفت کا راز
ہر ادا ان کی مجھ سے ہی منسوب ہے

جی تو کرتا ہے بانہوں میں بھر لوں انھیں
بات لیکن یہ سنتے ہیں معیوب ہے

وہ ہی مانوس سی خوشبو آنے لگی
لا ادھر نامہ بر، ان کا مکتوب ہے

بس تری دھن ہے اور عالم بیخودی
لوگ سمجھے ہیں یہ کوئی مجذوب ہے

حسن کے سامنے کیسے شکوے گلے
بات وہ کیجے جو ان کو مر غوب ہے

اے ‘حسن‘ اس لئے ان سے بنتی نہیں
جی حضوری ھی بس ان کو مطلوب ہے ‘

Rate it:
28 Apr, 2016

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS
About the Author: F.H.SIDDIQUI
*Social science teacher and trainer

.. View More
Visit 158 Other Poetries by F.H.SIDDIQUI »

Reviews & Comments

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City