نقاب سے یوں نہ ہم کو دیکھو (دوگانا،کورس)

Poet: Dr.Zahid Sheikh
By: Dr.Zahid Sheikh, Lahore,Pakistan

۔۔۔لڑکا اور دوست۔۔۔

نقاب سے یوں نہ ہم کو دیکھو
تمھاری آنکھوں پہ مر رہے ہیں

پیے بنا اب نہ رہ سکیں گے
کہ جام نظروں کے بھر رہے ہیں

تمھاری شوخی بھری ادائیں
ہماراچپکے سے دل چرائیں
تمھاری قربت ہے ایک جادو
کبھی بھی تم سے نہ دور جائیں

کہیں جدا ہم سے ہو نہ جاؤ
اداس لمحوں سے ڈر رہے ہیں

نقاب سے یوں نہ ہم کو دیکھو
تمھاری آنکھوں پہ مر رہے ہیں

۔۔۔لڑکی اور سکھیاں۔۔۔

اجی بتائیں تو کیوں ہماری
حسین آنکھوں پہ مر رہے ہیں ؟

ہماری رنگیں اداؤں پر کیوں
جناب یوں آہیں بھر رہے ہیں ؟

ابھی تو چہرہ نہیں دکھایا
نقاب ہم نے نہیں ہٹایا

چھپا ہے پردے میں سارا جادو
ابھی تو پردہ نہیں اٹھایا

حضور اتنا بہت ہے جائیں
معاف ہم آج کر رہے ہیں

اجی بتائیں تو کیوں ہماری
حسین آنکھوں پہ مر رہے ہیں

ہماری رنگیں اداؤں پر کیوں
جناب یوں آہیں بھر رہے ہیں

Rate it:
08 Apr, 2013

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS
About the Author: Dr. Zahid Sheikh
AM AN HONEST MAN AND LIKE HONEST AND LOVING PEOPLE....
[email protected]
.. View More
Visit 447 Other Poetries by Dr. Zahid Sheikh »

Reviews & Comments

bohat khoob zahid sahab, koi aesa song likheye jo pop music k sath suit karay, i will sing that...

By: Adnan, Karachi on May, 08 2013

ADNAN AAP KA BE HAD SHUKRIA JO AAP
NEY MEREY IS GEET KI TAREEF KI
AAP POP SINGER HEIN YE JAAN KAR KHUSHI HUEE
MEREY IS WEB PAR BE SHUMAAR SONGS HEIN AAP KO JO
PSAND AAEY AAP USEY GA SAKTEY HEIN
ELEHDA SEY KOEE POP SONG LIKHUN IS K LIEY
AAP MUGH SEY MERI E MAIL PAR RABTA KAR SAKTEY HEIN
JIS KA ADDRESS OOPER MEREY NAAM K SAATH LIKHA HAI
AAP KI REQUIREMENT DEKH KAR HI KUCH LIKHUN GA
THANX AGAIN
BE HAPPY WITH ALL THE BEAUTIES OF LIFE
By: Dr.Zahid Sheikh, lahore pakistan on May, 12 2013

Very Nice combination for boy and girl ...
Muhtaram Dr. Sahib ...
very nice creation with lot of love and romancing atmosphere ....
I like and 5Stars for you ... bahut khus rahain ... Ameen
Be Happy always with Great Smile.
Shabeeb Hashmi

By: Shabeeb Hashmi, Al-Khobar on Apr, 16 2013

THANX SHABEEB SAHIB FOR 5STAR COMMENTS
THANX AGAIN SIR
BE HAPPY WITH ALL THE BEAUTIES OF LIFE
By: Dr.Zahid Sheikh, lahore pakistan on Apr, 21 2013

Dr. Sahib you write so good .. jazbat aur ahsasat ka khobsorat sangam ...
Take Care ..
Jazeb

By: Jazeb, Jeddah on Apr, 15 2013

THANX JAZEB SAHIB FOR ADMIRATION
THANX AGAIN
BE HAPPY WITH ALL THE BEAUTIES OF LIFE
By: Dr.Zahid Sheikh, lahore pakistan on Apr, 21 2013

dair se comments dene ki muafi
aur iss klaam ki kia baat aap ka
apna aik munfird andaz hai wo
geet ho ya gazal aap har sinaf
se insaf karte hein issi tarah likht
rehiye zahid bhai Allah aap ko
slaamat rakhe......asghr

By: asghar, birmingham on Apr, 09 2013

"ASGHAR BHAEE" PARHA JAEY
THANX
By: Dr.Zahid Sheikh, lahore pakistan on Apr, 09 2013
THANX ASGAR BHAEE FOR FLORID
AND ROSY WORDS OF ADMIRATION
THANX AGAIN
BE HAPPY WITH ALL THE BEAUTIES OF LIFE
By: Dr.Zahid Sheikh, lahore pakistan on Apr, 09 2013

kia baat hai dr.sahib lajwab geet likha hamesha ki tarah

By: Rashid Mir, Sahiwal on Apr, 09 2013

THANX RASHID MIR SAHIB FOR CUTE
PRAISE OF MY POETRY
THANX AGAIN
BE HAPPY WITH ALL THE BEAUTIES
OF LIFE
By: Dr.Zahid Sheikh, lahore pakistan on Apr, 09 2013

Zabardast Dr g geet likhtey rahen aur hamara dil khush kartey rahen

By: Parveen, lahore on Apr, 09 2013

THANX PARVEEN SAHIBA FOR
LOVELY COMMENTS OF ADMIRATION
THANX AGAIN
BE HAPPY WITH ALL THE BEAUTIES OF LIFE
By: Dr.Zahid Sheikh, lahore pakistan on Apr, 09 2013

Zahid bhae uss din ka intezar hai jb hm aap k ye geet kisi musiqar ki dhun pe kisi sureelay kalakar se sunainge aap ne tau jesay is field mein PhD krli hai geet nigari mein
buht khoob
khush rahain

By: uzma, Lahore on Apr, 08 2013

بے حد شکریہ عظمیٰ سسٹر جی آپ نے تبصرے
کی میٹھی میٹھی جلیبیاں کھلائیں۔ بہت مزہ آیا
آپ کے تبصرے بھی آپ کی شاعری کی طرح بہت
شاندار اور جاندار ہوتے ہیں۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ اور پھر جو ان
میں پر خلوص مشورہ ہوتا ہے وہ تو گویا مجھے مفت
مل جاتا ہے اور اس مشورے میں تو ایک پیاری سی
پر خلوص بہن کی جھلک ہی ہمیشہ نظر آتی ہے ۔
اب آج ہی دیکھ لیجیے آپ نے اس خواہش کا اظہار کیا کہ
اسے کوئی موسیقار دھن میں ڈھالے اور پھر کوئی سریلا
گلوکار اور گلوکارہ اپنی مدھر آواز میں گائے۔
اس سلسلے میں لتا منگیشکر اور آشہ بھوسلے دونوں
سے رابطہ کیا تو انھوں نے معزرت کر لی کہ موسمی
اثرات کے
باعث دونوں کا گلہ خراب ہے۔
پھر ملکہ ترنم نورجہان، مہدی
حسن صاحب۔ محمد رفیع ، ، مالا اور
احمد رشدی صاحب سے رابطہ قائم کرنے کو
کوشش کی
تو پتا چلا وہ سب عالم ارواح میں گیت گا گا
کر سب کو خوش کر رہے ہین اور زمینی مخلوق سے رابطہ
کرنے کے قطعی موڈ میں نہیں ہیں۔
اب سوچ رہے ہیں کہ موجودہ گلوکاروں میں سے کن
کو زحمت دیں کہ وہ اپنی آوازوں کا جادو میرے اس نغمے
کو بخشیں۔
۔۔اس سلسلے میں جیسے ہی کوئی پیش رفت ہوئی
آپ کو بہن جی آگاہ کر دیا جائے گا۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ اور گیت
ریکارڈ ہونے کے بعد تو سی ڈی بھی آپ کے پتے پر
بھجوا دی جائے گی۔ ڈاک کا خرچہ البتہ آپ کے
زمے۔

یہ تو سب ذرا تفنن طبع کی باتیں تھیں۔۔۔۔ مین تو یہ
سب اپنے اندر کی دنیا کو راضی کرنے کے لیے لکھتا ہوں
آپ سب دوستوں اور ساتھیوں کو میری عام سی کاوش
پسند آتی ہے
تو اس سے وہ خوشی ملتی ہے جو کسی بیش قیمت
خذانے کو
پا کے بھی نہیں مل سکتی۔۔۔ داد کی صورت مجھے جو
اپنایت آپ سب سے مل جاتی ہے اس جیسی تو کوئی
اور چیز مل ہی نہین سکتی۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
عیسیٰ نے اپنی جوانی کے بائیس قیمتی
سال
تاج محل کی تعمیر مین صرف اس لیے لگا دیے کہ شاہ جہاں
کے منہ سے یہ الفاط سن لے
“ مجھے اس میں اپنی بیوی ممتاز زندہ اور بولتی
محسوس ہوتی ہے۔۔
اور جب یہ جملہ بادشاہ کی زباں سے ادا ہو گیا تو
عیسیٰ
بادشاہ سے انعام میں کچھ بھی لیے بغیر چپ چاپ
کسی ایسی منزل کی طرف چل دیا جہاں سے پھر
پلٹ کر نہ آیا۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
سچا فنکار پیسوں کا نہیں اپنی قدر کا بھوکا
ہوتا ہے۔
۔۔۔۔۔۔ لوگوں کا خلوص اور پیار اس کے لیے سب
سے اہم باتیں ہوتی ہیں ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
آپ سب کا خلوص مجھے مل جاتا ہے ۔ میری حوصلہ افزائی
اور قدر شناسی نظر آ جاتی ہے تو یقین کیجیے محترمہ
عظمیٰ صاحبہ ان سے بڑھ کر مجھے کچھ اور نہیں چاہیے
کوئی میرے گیت گائے یا نہ گائے ۔ مین یہ سب آپ دوستوں
اور اپنے معزز ریڈرز کے لیے لکھتا ہوں
جب آپ لوگوں کافیڈ بیک مجھے ملتا ہے تو مجھے اپنی
محنت کا معاوضہ
بھی اسی وقت مل جاتا ہے۔
آپ کا بے حد شکریہ جو آپ نے اتنی محبت اور اتنے خلوص سے
اپنے بھائی کو یاد فرمایا۔
آخری بات جناب ہم ابھی گیت نگاری میں پہلی جماعت کے طالب
علم ہیں پی ایچ ڈی نہیں ہیں
اللہ آپ کو سدا شاد و آباد رکھے، آمین

By: Dr.Zahid Sheikh, lahore pakistan on Apr, 09 2013

زاہد صاحب
بہت خوبصورت گیت لکھا ہے۔
آپ کی باقی شاعری کی طرح آپ کے گیت بھی بہت
دلکش اور اچھوتے ہیں اور ان میں بہت نغمگی اور روانی
ہے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
زیر نظر گیت بھی ایک بے مثال اور حسین تخلیق ہے اور
دل میں اتر جانے والے جادو سے لبریز ہے۔
بہت سے گانے یاد آ رہے ہیں
جیسے
رخ سے ذرا نقاب ہٹا دو میرے حضور
جلوہ پھر ایک بار دکھا دو میرے حضور
یا
یہ جو چلمن ہے دشمن ہے ہماری
یا
سرکتی جائے ہے رخ سے نقاب آہستہ آہستہ
یا
پردے میں رہنے دو پردہ نہ اٹھاؤ
یا
پردہ ہے پردہ پردے کے پیچھے پردہ نشیں ہے

آپ کے گیت نے ہزاروں گیت یاد دلادئے۔وہ گیت جو بے
حد سریلے اور دل کو چھونے والے جادوئی اثر سے مالامال تھے۔
اس بہت حسین
دلکش
دلربا
دلپذیر
اور
مسحور کن گیت کے لئے
داد کے پھول
دعاؤں کے نذرانے
آپ کی نذر
قبول ہوں۔

By: Azra Naz, Reading UK on Apr, 08 2013

بہت شکریہ عزرا ناز جی آپ نے اپنے محسوس
انداز میں دل کھول کر داد دی اور ساتھ ہی ساتھ
ماضی کے بہت سے حسین گیت بھی یاد دلا دیے۔
حیرت ہے آپ نے تو پاکسان اور ہندوستان کا تقریبا“
ہر گیت سن رکھا ہے بلکہ چند ایسے گیتوں کا بھی
ذکر فرما دیتی ہیں جو میرے لیے نئے ہوتے ہیں۔
خوشی ہوتی ہے کہ میرے گیتوں کو پڑھنے والے اس
قدر صاحب ذوق ہیں اور گیت نگاری کو سمجھنے کے
ساتھ اس پر یوں داد بھی دیتے ہیں۔۔۔۔۔۔۔۔
یہ آپ ایسے ساتھی تو ہیں جن کی پر خلوص داد
مجھے
مزید لکھنے کا حوصلہ بخشتی ہے۔ اور پھر میرے
لیے یہ امر بھی
حد درجہ اطمینان بخش ہے کہ مجھے سراہنے
والوں میں وہ لوگ شامل ہیں جو خود شاعری کے
اعلیٰ معیار کو برقرار رکھے ہوئے ہیں
۔۔۔۔۔۔۔
مجھے آپ سب کا ہم عصر ہونے پر فخر ہے اور ہماری
آج کی شاعری کل شاید ماضی کی حسین یاد بن کے
رہ جائے ۔۔۔۔۔۔اور لوگ ہم سب کا ذکر بھی اسی طرح کریں
جیسے آج
ہم گزرے ہوئے شاعروں اور فنکاروں کا کرتے ہیں۔۔۔۔۔
میری صرف ایک خواہش ہے کہ اپنے پیچھے کوئی ایسا
کام چھوڑ جاؤں جو ناقابل فراموش ہو اور جس
کی بنا پر لوگ ہمیشہ مجھے اچھے لفظوں سے یاد کریں۔
آپ کا ایک بار پھر بے حد شکریہ عزرا ناز صاحبہ آپ نے
اتنے خلوص بھرے تبصرے سے نوازا
اللہ آپ کو اور آپ کے اہل خانہ کو سدا شاد و آباد رکھے،
آمین
By: Dr.Zahid Sheikh, lahore pakistan on Apr, 09 2013

Zahid sahib aap bhi kia shayar hein aap ki har ada hi piari lagi yani aap ki har shayary mujhey be had psand aee hai.Aaj to kuch aur hi baat hai.baar baar parhney sey bhi dil nahi bhar raha.Bohat haseen geet hai Dr.Zahid I love your poetry .......Such much.Wesey itni shokhi geeton mein khuda kher karey

By: Sara Afzal, pakistan on Apr, 08 2013

THANX SARA SAHIBA FOR SO SALTY COMMENTS
ON MY NEW SONG.
2DAY U R IN NAUGHTY MOOD.
ANYWAY I ENJOYED A LOT.
IT IS MY GOOD FORTUNE THAT U LIKED MY SONG
AND ALSO APPRECIATED WITH ROSY WORDS.
UR APPRECIATION IS MUCH VALUABLE FOR
ME AS U HV DEEP KNOWLEDGE OF POETRY AND
LITERATURE WHICH I SEE IN UR E.MAILS.
THANX AGAIN VERY RESPECTED MOHTRMA SARA
SAHIBA FOR GIVING TIME TO MY POETRY
BE HAPPY WITH ALL THE BEAUTIES OF LIFE

By: Dr.Zahid Sheikh, lahore pakistan on Apr, 08 2013

جناب بھائی جان جی کیا ہی خوبصورت کررس لکھا ہے آپ نے۔۔۔ماشا اللہ آپ کی ذھانت اور شعروں کو اپنے سریلے
احساسات میں ڈھلنا تو کوئی آپ سے سیکھے۔۔۔۔۔یہ فن تو عام شعاری سے ہٹ کر ہے اور بہت مشکل ہے۔ آپ کے
اس کورس کو سن کر کچھ نغمے یاد آ کئے
آنکھوں میں قیامت کے قاجل ہونٹوں پہ غزب کی لالی ہے
بندہ پرور کہیے کس کی تقدیر بدلنے والی ہے

پردے میں رہنے دہو پردہ نہ اٹھائو

رخ سے زرہ نقاب اٹھاو میرے حضور وغیرہ وغیرہ

آپ کی یہ کوشش بڑی ہی لطف اندوز اور داد کے قابل ہے۔ واہ واہ سر جی خوش رہیں اور یونہی پھول بکھیرتے رہیں اللہ آپ کو شادوآباد رکھے۔۔۔۔۔۔۔۔

By: Jamil Hashmi, Rawalpindi on Apr, 08 2013

THANX JAMIL BHIA FOR LOVELY COMMENTS
ON MY POETRY......
IT IS NEW EXPERIENCE
FOR ME 2 WRITE THIS TYPE OF ROMANTIC
SONG .U LIKED IT SO MY GOOD FORTUNE.
THANX AGAIN .
AUR HAAN AAP NEY BOHAT HASEEN NAGHMAAT KA APNEY
COMMENTS MEIN HAWALA DIA.ACHA KIA JO ITNEY
DILKUSH GEET YAAD DILA DIEY

BE HAPPY WITH ALL THE BEAUTIES OF LIFE
By: Dr.Zahid Sheikh, lahore pakistan on Apr, 08 2013

Very beautiful Dr.sahib aap itna acha likhty hain key gane ko dil chahta hai..aap ki tasweer dekh kar khush ho jaya kartey they aap ney wo pata nahi kahan kar di

By: Haroon Gillani, pakistan on Apr, 08 2013

THANX HAROON GILLANI SAHIB FOR LOVELY ADMIRATION.
THANX AGAIN SIR
BE HAPPY WITH ALL THE BEAUTIES OF LIFE
By: Dr.Zahid Sheikh, lahore pakistan on Apr, 08 2013

دوسرے شعر کا پہلا مصرع یوں ہے
پیے بنا اب نہ رہ سکیں گے


نوٹ: لفظ “ پئے “ غلط العام ہے ۔ پیے
درست املا ہے
شکریہ

By: dr.zahid sheikh, lahore,pakistan on Apr, 08 2013

Zahid Bahi very nice lovely song with lovely feelings .............. be happy always

By: AF(Lucky), K.S.A on Apr, 08 2013

THANX DEAR GURIA RANI MERI
PIARI SI BEHNA AROOJ FATIMA
FOR LOVELY COMMENRTS....
THANX AGAIN
BE HAPPY WITH ALL THE BEAUTIES OF LIFE
By: Dr.Zahid Sheikh, lahore pakistan on Apr, 08 2013
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City