نگاہ عشق میں دیکھا مقام آگہی میں نے

Poet: Samia bashir
By: Samia Bashir, Samundri

نگاہ عشق میں دیکھا مقام آگہی میں نے
وفائے عشق سے حاصل کیا کام بندگی میں نے

نا کامی میں بلندی تھی بلندی میں بھی پستی تھی
اسی کشمکش میں رکھا تھام زندگی میں نے

بغاوت بھی عقیدت بھی عداوت بھی عنائیت بھی
لمحہ بھر میں بدلتے دیکھا پیعام دل لگی میں نے

عقابوں کی خصلت میں نگاہوں کے طلسموں میں
ہے دیکھا موجزن اس میں مہم تیرگی میں نے
 

Rate it:
27 Aug, 2013

More Love / Romantic Poetry

POPULAR POETRIES

FAMOUS POETS
About the Author: Samia Bashir
Visit 42 Other Poetries by Samia Bashir »
Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>

Reviews & Comments

Nice Poetry

By: shuja.uddin, karachi on Jan, 26 2014

Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City
Language:    

My Page! Account Login:

(Post your Comments Immediately)
Email
Password
Do not have MyPage! account? Create Now

Guest Login:

(Comments will be online after Moderator Review)
Name
Email
City